NohayOnline

Providing writeups (english & urdu) of urdu nohay, new & old


Bain tha sakina ka

Nohakhan: Sachey Bhai
Shayar: Saeed Shaheedi


bain tha sakina ka shaam hone wali hai
tum kab aaoge baba shaam hone wali hai

khushk hai dehen mera teen din se pyasi hoo
kaun pani layega shaam hone wali hai
bain tha sakina ka…

neend kaise aayegi aur kiske seene par
jald aaiye baba shaam hone wali hai
bain tha sakina ka…

asr ke ujaale may ghar luta ke baithi hoo
ab na lootle aada shaam hone wali hai
bain tha sakina ka…

aao mustafa aao aao murtaza aao
aao fatema zehra shaam hone wali hai
bain tha sakina ka…

bhai aur chacha sab hi saath may tumhare hai
koi bhi nahi aata shaam hone wali hai
bain tha sakina ka…

shaam ke andhere may kaampti hoo reh reh kar
ghut raha hai dam mera shaam hone waali hai
bain tha sakina ka…

kya saeed kehta hai haale dil sakina ka
subha se hai hungama shaam hone waali hai
bain tha sakina ka...

بین تھا سکینہ کا شام ہونے والی ہے
تم کب آئو گے بابا شام ہونے والی ہے

خُشک ہے دِہن میرا تین دن سے پیاسی ہوں
کون پانی لائے گا شام ہونے والی ہے
بین تھا سکینہ کا۔۔۔

نیند کیسے آئے گی اور کِس کے سینے پر
جلد آئیے بابا شام ہونے والی ہے
بین تھا سکینہ کا۔۔۔

عصر کے اُجالے میں گھر لُٹا کے بیٹھی ہوں
اب نہ لُوٹ لیں اعدائ شام ہونے والی ہے
بین تھا سکینہ کا۔۔۔

آئو مُصطفٰی آئو آئو مُرتضٰی آئو
آئو فاطمہ زہرائ شام ہونے والی ہے
بین تھا سکینہ کا۔۔۔

بھائی اور چچا سب ہی ساتھ میں تمہارے ہیں
کوئی بھی نہیں آتا شام ہونے والی ہے
بین تھا سکینہ کا۔۔۔

شام کے اندھیرے میں کانپتی ہوں رہ رہ کر
گھٹ رہا ہے دم میرا شام ہونے والی ہے
بین تھا سکینہ کا۔۔۔

کیا سعید کہتا ہے حال دل سکینہ کا
صبح سے ہے ہنگامہ شام ہونے والی ہے
بین تھا سکینہ کا۔۔۔