ذوالجناح نے یہ اشاروں میں سکینہ سے کہا
میں ہوں شرمندہ اے بی بی تیرا بابا نہ رہا

کیا بتائوں میں تجھے حال تیرے بابا کا
زخم جب لگتا تھا بھائی کو وہ دیتے تھے صدا
کیسے بتلائوں میری پشت سے وہ کیسے گرا
خُلد سے روتے ہوئے آئے رسولِ دو سرا
میں ہوں شرمندہ ۔۔۔۔۔
ذوالجناح نے یہ ۔۔۔۔۔

حشر میں شہ کے عزادار مجھے چومیں گے
اور زہرا کے طرفدار مجھے چومیں گے
نسل ہے جن کی وفادار مجھے چومیں گے
اور غازی کے علمدار مجھے چومیں گے
میں ہوں شرمندہ ۔۔۔۔۔
ذوالجناح نے یہ ۔۔۔۔۔

ذوالجناح کہتا ہے مجھ کو میرا آقا ہے حسین
لاش پہ لاش جو مقتل سے تھا لایا وہ حسین
دوش پرجس کو پیعمبر نے بیٹھایا وہ حسین
جھولا جبرئیل نے بچپن میں جھُلایا وہ حسین
میں ہوں شرمندہ ۔۔۔۔۔
ذوالجناح نے یہ ۔۔۔۔۔

ٹکڑے قاسم کے اُٹھائے تھے جو میں ساتھ میں تھا
برچھی اکبر کی نکالی تھی جو میں ساتھ میں تھا
ہاتھ بھائی کے اُٹھائے تھے تو میں ساتھ میں تھا
تیر اصغر کا نکالا تھا جو میں ساتھ میں تھا
میں ہوں شرمندہ ۔۔۔۔۔
ذوالجناح نے یہ ۔۔۔۔۔

طوسی یہ سُن کے سکینہ کو بھی غش آنے لگا
حال میداں جب کر چُکا راہوار بیاں
پھر سکینہ نے کہا کیسے جیوں گی میں بھلا
جس پہ سوتی تھی میں وہ بابا کا سینہ نہ رہا
میں ہوں شرمندہ ۔۔۔۔۔
ذوالجناح نے یہ ۔۔۔۔۔


zuljana ne ye isharon may sakina se kaha
mai hoo sharminda ay bibi tera baba na raha

kya bataun mai tujhe haal tere baba ka
zakhm jab lagta tha bhai ko wo deta thay sada
kaise batlaun meri pusht se wo kaise gira
khuld se rote hue aaye rasoole do sara
mai hoo sharminda....
zuljana ne ye....

hashr may sheh ke azadar mujhe choomenge
aur zehra ke tarafdaar mujhe choomenge
nasle hai jinki wafadar mujhe choomenge
aur ghazi ke alamdar mujhe choomenge
mai hoo sharminda....
zuljana ne ye....

zuljana kehte hai mujhko mera aaqa hai hussain
laash pe laash jo maqtal se tha laaya wo hussain
dosh par jisko payambar ne bithaya wo hussain
jhoola jibreel ne bachpan may jhulaya wo hussain
mai hoo sharminda....
zuljana ne ye....

tukde qasim ke uthaye thay to mai saath may tha
barchi akbar ki nikali thi to mai saath may tha
haath bhai ke uthaye thay to mai saath may tha
teer asghar ka nikala tha jo mai saath may tha
mai hoo sharminda....
zuljana ne ye....

tusi ye sunke sakina ko bhi ghash aane laga
haal miadan ka jab kar chuka rehwar bayan
phir sakina ne kaha kaise jiyungi mai bhala
jispe soti thi mai wo baba ka seena na raha
mai hoo sharminda....
zuljana ne ye....
Noha - Zuljana Ne Ye
Shayar: Tusi Zangipuri
Nohaqan: Syed Rashid Abbas
Download Mp3
Listen Online