زندان سے رہا ہو گئے سادات
اللہ یہ کیا ہو گئے سادات
خود کرب و بلا ہو گئے سادات

یہ کیسی رہائی ہے کے دل خوش نہیں ہوتا
کیا رِہ گیا زندان میں کے ہر شہہ بھی ہے روتا
ہا اپنی سکینہ سے جُدا ہوتے ہیں سادات
اللہ میرے اللہ
زندان سے رہا ۔۔۔

اے شامیو اب چین سے آرام سے سونا
بے چین کرے گا نہ کسی بچی کا رونا
جو شب کو بُکا کرتی تھی روئے گی کبھی نہ
اللہ میرے اللہ
زندان سے رہا ۔۔۔

زینب نے کہا قید میں ہے میرا خزانہ
اے وارثو جب شام ڈھلے اس طرف آنا
تُربت پہ سکینہ کی بھی آئے تھے نانا
اللہ میرے اللہ
زندان سے رہا ۔۔۔

سجاد نے دیور جو اسیری کے اُٹھائے
ٹوٹے ہوئے سب زخم ہرے ہو گئے سارے
سر دیکھ کے بابا کا تڑپ کر وہ پُکارے
اللہ میرے اللہ
زندان سے رہا ۔۔۔

زینب نے ردا پا کے کہا شکر ِ خدا ہے
عباس میرے بھائی مگر صدمہ بڑا ہے
سر ننگے ہمیںسارا جہان دیکھ چُکا ہے
اللہ میرے اللہ
زندان سے رہا ۔۔۔

کلثوم جو اک لفظ ابھی تک نہ تھی بولی
جس وقت رسن بازو تھی سجاد نے کھولی
کہنے لگی کیا جائے وطن خالی ہے جھولی
اللہ میرے اللہ
زندان سے رہا ۔۔۔

یہ قافلہ جب کرب و بلا لوٹ کے آیا
دیکھا کہ پڑا دھوپ میں ہے بھائی کا لاشہ
زینب نے سرِ خاکِ بلا خود کو گرایا
اللہ میرے اللہ
زندان سے رہا ۔۔۔
کیا شان تھی تھا یاب تھی جب گھر سے چلے تھے
مہمل تھی عماری تھی مشکیزے بھرے تھے
عباسِ علمدار علم کھولے ہوئے تھے
اللہ میرے اللہ
زندان سے رہا ۔۔۔

گلیوں میں مدینے کی عجب شور بپا ہے
صغریٰ سے ابھی آ کے کسی نے یہ کہا ہے
آ صغریٰ تیرا بابا وطن چھوڑ رہا ہے
اللہ میرے اللہ
زندان سے رہا ۔۔۔

روضے پہ محمد کے جو سیدانیاں پہنچی
اے سرور و ریحان نگاہیں بھی جھُکی تھی
دکھلا کے نشاں رسی کے زینب یہ پُکاری
اللہ میرے اللہ
زندان سے رہا ۔۔۔


zindaan se reha hogaye sadaat
allah ye kya hogaye sadaat
khud karbobala hogaye sadaat

ye kaisi rehaayi hai ke dil khush nahi hota
kya rehgaya zindaan may ke har qaidi hai rota
haa apni sakina se juda hote hai sadaat
allah mere allah
zindaan se reha....

ay shaamiyo ab chayn se aaraam se sona
bechain karega na kisi bachi ka rona
jo shab ko buka karti thi royegi kabhi na
allah mere allah
zindaan se reha....

zainab ne kaha qaid may hai mera khazana
ay wariso jab shaam dhale is taraf aana
turbat pe sakina ki bhi aaye thay nana
allah mere allah
zindaan se reha....

sajjad ne devar jo aseeri ke uthaaye
toothe hue sab zakhm hare hogaye saare
sar dekh ke baba ka tadap kar wo pukaare
allah mere allah
zindaan se reha....

zainab ne rida paa ke kaha shukre khuda hai
abbas mere bhai magar sadma bada hai
sar nange hame saara jahan dekh chuka hai
allah mere allah
zindaan se reha....

kulsoom jo ek lafz abhi tak na thi boli
jis waqt rasan baazu thay sajjad ne kholi
kehne lagi kya jaaye watan khaali hai jholi
allah mere allah
zindaan se reha....

ye khaafila jab karbobala laut ke aaya
dekha ke pada dhoop may hai bhai ka laasha
zainab ne sare khaakhe bala khud ko girayaa
allah mere allah
zindaan se reha....

kya shaan thi tha-yaab thi jab ghar se chale thay
mehmil thi amaari thi mashkeeze bhare thay
abbas-e-alamdar alam khole hue thay
allah mere allah
zindaan se reha....

galiyon may madine ki ajab shor bapa hai
soghra se abhi aake kisi ne ye kaha hai
aa sughra tera baba watan chod raha hai
allah mere allah
zindaan se reha....

roze pe muhammad ke jo saydaniya pahunchi
ay sarwaro rehaan nigaahe bhi jhuki thi
dikhlake nishaan rassi ke zainab ye pukari
allah mere allah
zindaan se reha....
Noha - Zindan Se Reha Hogaye
Shayar: Rehaan Azmi
Nohaqan: Nadeem Sarwar
Download Mp3
Listen Online