یہ ماتم کیسے رُک جائے
زہرا کی دُعا ہے یہ ماتم
یہ ماتم کیسے رُک جائے

کونین کی ہر دولت دے کر
اس غم کی حفاظت کرنا ہے
شبیر کی خاطر جینا ہے
شبیر کی خاطر مرنا ہے
یہ جسم رہے یا مٹ جائے
مظلوم کا ماتم کرنا ہے

زہرا کی تمنا پوری ہو
یہ جان رہے یا مٹ جائے

زہرا کی دُعا ہے یہ ماتم
یہ ماتم کیسے رُک جائے

اس پرچم کی عظمت کے لیئے
عباس نے بازو دے ڈالے
اس پرچم کی عزت کے لیئے
غازی نے سہے دل پر بھالے
اس پرچم کے مشکیزہ سے
لپٹے ہیں سکینہ کے نالے

عباس ِعلی کا پرچم ہے
یہ پرچم کیسے جُھک جائے

زہرا کی دُعا ہے یہ ماتم
یہ ماتم کیسے رُک جائے

سالارِ حُسینی کیا کہنا
معراجِ وفا سر تاجِ وفا
ہر موج تڑپتی ہے اب تک
ساحل سے جو توں پلٹا پیاسا
باحُکمِ حُسینی جنگ نہ کی
ہر وار سہا ہر ظُلم سہا

آغوش میں جب تک فکر یہ تھی
پیاسی نہ سکینہ رہ جائے

زہرا کی دُعا ہے یہ ماتم
یہ ماتم کیسے رُک جائے

جب تک یہ سکت اس جسم میں ہے
حق اپنا ادا کر دینا ہے
اس ما جو سعادت سے ہم کو
یہ جان فِدا کر دینا ہے
یا اشک سے یا خونِ دل سے
اس دامن کو بھر دینا ہے

آئی ہے یہاں اک شہزادی
اُمید کا دامن پھیلائے

زہرا کی دُعا ہے یہ ماتم
یہ ماتم کیسے رُک جائے

وہ وقت ہے اب تک آنکھوں میں
تھا خون میں غلطاں ابنِ علی
اور گونج رہی تھی مقتل میں
فریاد و فُغاں اک دُکھیا کی
سینے سے بہیں خوں کی دھاریں
اور ہاتھ نہ رُکنے پائے کبھی

مظلوم کا ماتم ہوتا رہے
زہرا کی صدا جب تک آئے

زہرا کی دُعا ہے یہ ماتم
یہ ماتم کیسے رُک جائے

یہ ماتم ہے ھل من کی صدا
ہر اشک ہے جذبہ نُصرت کا
مُنہ حق کی طرف آ جانے کا
حاصل ہے ابھی تک اک موقع
پہچان ضمیر و دل کی صدا
اس ماتم میں شامل ہو جا

شبیر بُلاتے ہیں اب تک
گر حُر ہو کہیں تو آ جائے

زہرا کی دُعا ہے یہ ماتم
یہ ماتم کیسے رُک جائے


yeh matam kaise ruk jaye
zehra ki dua hai ye matam
ye matam kaise ruk jaye

kaunain ki har daulat de kar
is gham ki hifazat karna hai
shabbir ki khaatir jeena hai
shabbir ki khaatir marna hai
ye jism rahe ya mit jaye
mazlom ka matam karna hai

zehra ki tamanna poori ho
ye jaan rahe ya mit jaye

zehra ki dua hai ye matam
ye matam kaise ruk jaye

is parcham ki azmat ke liye
abbas ne baazu de daale
is parcham ki izzat ke liye
ghazi ne sahey dil par bhaale
is parcham ke mashkeeza se
liptay hai sakina ke naale

abbas e ali ka parcham hai
ye parcham kaise jhuk jaye

zehra ki dua hai ye matam
ye matam kaise ruk jaye

salaar e hussaini kya kehna
meraj-e-wafa sartaj-e-wafa
har mauj tadapti hai ab tak
saahil se jo tu palta pyaasa
ba hukm-e-hussaini jang na ki
har waar saha har zulm saha

aaghosh may jab tak fikr ye thi
pyasi na sakina reh jaye

zehra ki dua hai ye matam
ye matam kaise ruk jaye

jab tak ye sakat is jism may hai
haq apna ada kar dena hai
is majjo saadat se humko
ye jaan fida kar dena hai
ya ashk se ya khoon-e-dil se
is daaman ko bhar dena hai

aayi hai yahan ek shehzaadi
umeed ka daaman phailaye

zehra ki dua hai ye matam
ye matam kaise ruk jaye

wo waqt hai ab tak ankhon may
tha khoon may galtaa'n ibne ali
aur goonj rahi thi maqtal may
faryad-o-fughan ek dukhiya ki
seene se bahe khoon ki dhaare
aur haath na rukne paaye kabhi

mazloom ka matam hota rahe
zehra ki sada jab tak aaye

zehra ki dua hai ye matam,
ye matam kaise ruk jaye

ye matam hai halmin ki sada
har ashk hai jazba nusrat ka
moo haq ki taraf aajaney ka
haasil hai abhi tak ek maukha
pehchan zameen-o-dil ki sada
is matam mein shaamil hoja

shabbir bulate hai ab tak
gar hur ho kahin to aajaye

zehra ki dua hai ye matam
ye matam kaise ruk jaye
Noha - Zehra Ki Dua Hai
Shayar: Javed Maqsood
Nohaqan: Sachey Bhai
Download Mp3
Listen Online