زمانے میں کوئی ہو نفسِ پیغمبر تو ہم جانیں
علی کی بات کیا ہو لے کوئی قمبر تو ہم جانیں

ہے دعویٰ جانثاری کا بہت اسلام والوں کو
دیکھائے راہِ حق دے کے اپنا سرتو ہم جانیں
زمانے میں کوئی ہو ۔۔۔۔۔

بغیرِ حُبِ حیدر جو نبی کے عشق میں ڈوبے
نکل کر ہم کو دکھلائے لبِ کوثر تو ہم جانیں
زمانے میں کوئی ہو ۔۔۔۔۔

ہے پہرہ علقمہ پر آج تک عباسِ غازی کا
ذرا کوئی پرندہ مار تو لے پر تو ہم جانیں
زمانے میں کوئی ہو ۔۔۔۔۔

پہاڑوں کے بھی ہل جاتے ہیں دل نامِ علی سُن کر
کسی کے نام پر ہل جائے کنکر تو ہم جانیں
زمانے میں کوئی ہو ۔۔۔۔۔

کہا کرتی تھی زینب ہائے ہمارا شیر سا بھائی
دیکھائے سر سے کوئی چھین کر چادر تو ہم جانیں
زمانے میں کوئی ہو ۔۔۔۔۔

یہ زینب کا کلیجہ تھا یہ زینب ہی کی ہمت تھی
گلے پر بھائی کے دیکھے کوئی خنجر تو ہم جانیں
زمانے میں کوئی ہو ۔۔۔۔۔

تو ں شاعر ہے شاہِ دیں کا تجھے کیا خوف ہے محشر
فرشتے آئیں تیری قبر کے اندر تو ہم جانیں
زمانے میں کوئی ہو ۔۔۔۔۔


zamane may koi ho nafse payghambar to hum jaane
ali ki baat kya holay koi qambar to hum jaane

hai daawa jaanisari ka bahot islam walon ko
dikhaye rahe haq deke apna sar to hum jaane
zamane may koi ho....

baghair e hubbe hyder jo nabi ke ishq may doobe
nikal kar hum ko dikhlaye labe kausar to hum jaane
zamane may koi ho....

hai pehra alqama par aaj tak abbas e ghazi ka
zara koi parinda maar to le par to hum jaane
zamane may koi ho....

pahado ke bhi hil jaate hai dil name ali sunkar
kisi ke naam par hil jaye kankar to hum jaane
zamane may koi ho....

kaha karti thi zainab hai hamara sher sa bhai
dikhaye sar se koi cheen kar chadar to hum jaane
zamane may koi ho....

ye zainab ka kaleja tha ye zainab hi ki himmat thi
galay par bhai ke dekhe koi khanjar to hum jaane
zamane may koi ho....

tu shayar hai shahe deen ka tujhe kya khauf hai mehshar
farishte aaye tere qabr ke andhar to hum jaane
zamane may koi ho....
Noha - Zamane May Koi Ho
Shayar: Mehshar Lakhnavi
Nohaqan: Tableeq e Imamia (Nazim Hussain)
Download Mp3
Listen Online