زینب نے کے بین یہ مرقد سے لپٹ کر
اٹھو میرے بھیا ، اٹھو میرے بھیا

ہم آۓ ہیں بازاروں میں درباروں میں ہو کر
اٹھو میرے بھیا ، اٹھو میرے بھیا

کردیجئے بحل میری خطا اتنی تھی مجبور، میں بیکس و رنجور
گم ہوگئی زندان میں امانت تیری دختر
اٹھو میرے بھیا ، اٹھو میرے بھیا

شرمندہ ہوں یہ داغ جگر پر ہے نمایاں، اے سید ذیشان
پرسے کے لئے آی ہوں بھیا میں لحد پر
اٹھو میرے بھیا ، اٹھو میرے بھیا

کس جا پہ ہے تربت علی اصغر کی بتا دو ، آواز سنا دو
ہو کوئی تو صورت کے ٹھرے دل مادر
اٹھو میرے بھیا ، اٹھو میرے بھیا

وہ ما وفادار وہ جرار وہ غمخوار ، ہم سب کہ نگہبار
کس جا ہے بتاؤ میرا عبّاس دلاور
اٹھو میرے بھیا ، اٹھو میرے بھیا

عباس کو بتلادوں سکینہ نے قضا کی، پیاسی ہی سدھاری
تم ساتھ چلو مجھ سے نہ سنبھلے گا یہ سن کر
اٹھو میرے بھیا ، اٹھو میرے بھیا

کچھ پوچھ تو لو حال سفر کیا ہوئی بیداد ، بتلےیگا سجاد
تھے عون و محمد علی اکبر سے نہ بڑھکر
اٹھو میرے بھیا ، اٹھو میرے بھیا

کوئی نہ انیس اور نہ ہمدم نہ سہارا، فریاد خدارا
ہے وقت مدد کیجئے حالات کو بہتر
اٹھو میرے بھیا ، اٹھو میرے بھیا


zainab ne kiye bain ye marqad se lipat kar
utho mere bhaiya, utho mere bhaiya

hum aaye hai baazaro may darbaro may hokar
utho mere bhaiya, utho mere bhaiya

kardije bahal meri khata itni thi majboor, mai bekaso ranjoor
gum hogayi zindan may amanat teri dukhtar
utho mere bhaiya, utho mere bhaiya

sharminda hoo ye daagh jigar par hai numayan, ay sayyade zeeshan
purse ke liye aayi hoo bhaiya mai lehad par
utho mere bhaiya, utho mere bhaiya

kis ja pe hai turbat ali asghar ki bata do, awaaz suna do
ho koi to surat ke tehre dile madar
utho mere bhaiya, utho mere bhaiya

wo ma wafadaar, wo jaraar wo ghamkhar, ham sab ka nigehbar
kis ja hai batao mera abbas-e-dilawar
utho mere bhaiya, utho mere bhaiya

abbas ko batladun sakina ne khaza ki, pyasi hi sidhari
tum saath chalo mujhse na samhlega ye sunkar
utho mere bhaiya, utho mere bhaiya

kuch pooch to lo haale safar kya hui bedaad, batlayega sajjad
baitha hai jhukaye hue sar pa asi dilbar
utho mere bhaiya, utho mere bhaiya

kuch boliye mai unko nahi poochungi bhaiya, wo dono thay fidiya
thay auno mohammad ali akbar se na badkar
utho mere bhaiya, utho mere bhaiya

koi na anees aur na humdam na sahara, faryaad khudaara
hai waqte madad kijiye halaat ko behtar
utho mere bhaiya, utho mere bhaiya
Noha - Zainab Ne Kiye Bain
Shayar: Anees Pehersari
Nohaqan: Ali Zia Rizvi
Download Mp3
Listen Online