زینب اور عباس
دونوں ہی سے کرب وبلا میں شِہ کو بڑی تھی آس
زینب اور عباس ۔۔۔۔۔

اک زہرا کی لاڈلی تھی اور ایک علی کا لال
ماں کا صبر دکھایا اک نے باپ کا جاہ و جلال
کرب و بلا میں بن گئے دونوں صبر و وفا کی اساس
زینب اور عباس ۔۔۔۔۔

قبلِ عصر حفاظت کا تھا بھائی ذمہ دار
بعدِ عصر اُٹھایا بنتِ زہرا نے یہ بار
بن گئی آس حرم کی زینب وہ تھی خود بے آس
زینب اور عباس ۔۔۔۔۔


دونوں لال کیئے زینب نے سرور پر قربان
نہر پہ دونوں ہاتھ کٹا کر صدقے میں دی جان
وار دیا سب کچھ بھائی پر جو تھا جس کے پاس
زینب اور عباس ۔۔۔۔۔

دشتِ بلا میں آ کر چھُوٹا دونوں کا یہ ساتھ
مشکیزہ سینے سے لگا کر دونوں کٹا کر ہاتھ
نہر کنارے سو گیا بھائی بہن ہوئی بے آس
زینب اور عباس ۔۔۔۔۔

وقتِ عصر گرے گھوڑے سے جب کہ شاہِ ابرار
حلقِ شاہِ مظلوم پہ رکھ دی ظالم نے تلوار
خیمے میں زینب تڑپی اور ساحل پر عباس
زینب اور عباس ۔۔۔۔۔

کتنے ہی دُکھ جھیلے دل پر کتنے ہی عالام
ہائے مگر وہ دشتِ ستم وہ رنج و علم کی شام
تنہا ہے مقتل میں زینب کوئی نہیں اب پاس
زینب زور عباس ۔۔۔۔۔

زینب ہے پابندِ رسن اب چلتا کچھ نہیں زور
نوکِ سناں پر سر ہے تن ہے بھائی کا بے دور
روتی ہے ماں جائی کی میت پہ حسرت و یاس
زینب اور عباس ۔۔۔۔۔


zainab aur abbas
dono hi se karbobala may sheh ko badi thi aas
zainab aur abbas....

ek zehra ki laadli thi aur ek ali ka laal
maa ka sabr dikhaya ek ne baap ka jaho jalaal
karbobala may bangaye dono sabr o wafa ki asaas
zainab aur abbas....

qabre asr hifazat ka tha bhai zimmedar
baaghe asr uthaya binte zehra ne ye baar
bangayi aas haram ki zainab wo thi khud be aas
zainab aur abbas....

dono laal kiye zainab ne sarwar par qurbaan
nehr pe dono haath kata kar sadqe may di jaan
waar diya sab kuch bhai par jo tha jiske paas
zainab aur abbas....

dashte bala may aakar choota dono ka ye saath
mashkeeza seene se laga kar dono kata kar haath
nehr kanare sogaya bhai behan hui be aas
zainab aur abbas....

waqte asr giray ghoday se jab ke shahe abraar
halqe shahe mazloom pe rakhdi zaalim ne talwaar
qaime may zainab tadpi aur saahil par abbas
zainab aur abbas....

kitne hi dukh jhelay dil par kitne hi alaam
haye magar wo kashte sitam wo ranjo alam ki shaam
tanha hai maqtal may zainab koi nahi ab paas
zainab aur abbas....

zainab hai pabande rasan ab chalta kuch nahi zor
noke sina par sar hai tan hai bhai ka be-door
roti hai majaye ki mayyat pe hasrat o yaas
zainab aur abbas....
Noha - Zainab Aur Abbas

Nohaqan: Sachey Bhai
Download Mp3
Listen Online