یہ دشتِ وحشت یہ شامِ غربت
یہ کون دریا سے آ رہا ہے

ہے علی کی بیٹی ہے تیغ پردہ جلال چہرے پہ چھا رہا ہے
یہ دشتِ وحشت ۔۔۔۔۔

جلائے پرائے اک طرف ہیں خیمیں ہے اک طرف بے کسوں کی زاری
ہیں گودیوں میں بلکتے بچے سماں وہ اُن کو ڈرا رہا ہے
یہ دشتِ وحشت ۔۔۔۔۔

بہت سے صدمے اُٹھا چکے ہیں نعیف اور زار ہو گئے ہیں
ہیں سامنے وارثوں کے لاشے یہ غم تمکو بہت کھا رہا ہے
یہ دشتِ وحشت ۔۔۔۔۔

اُس آنے والے پہ سب ہیں حیراں کے اُس کے آنے کا کیا ہے مقصد
یہ اور کیا لُوٹ لے گا آکر یہاں بھلا کیا دھرا رہاہے
یہ دشتِ وحشت ۔۔۔۔۔

ادھر یہ سب بیٹھے سوچتے ہیں اُدھر وہ بڑھتا ہے بڑھنے والا
سوار اسکے سفید پہ ہے نقاب سے رُخ چھُپا رہا ہے
یہ دشتِ وحشت ۔۔۔۔۔

علی کی بیٹی یہ پوچھتی ہے اُس آنے والے کی ہے غرض کیا
مگر وہ خاموش ہو کے رہوار اب نہ آگے بڑھا رہا ہے
یہ دشتِ وحشت ۔۔۔۔۔

غضب کے عالم میں کہہ رہی ہے کے بڑھنے والے ذرا سنبھل جا
میں بنتِ ﴿خلاشکن﴾ ہوں تُو سُن لے مجھے بھلا تُو ڈرا رہا ہے
یہ دشتِ وحشت ۔۔۔۔۔

وہ آنے والا نقاب اُلٹ کر یہ کہہ رہا ہے کے دیکھ زینب
یہ باپ تیرا ہے میری بیٹی تیری حفاظت کو آ رہا ہے
یہ دشتِ وحشت ۔۔۔۔۔

یہ سُن کے زینب تڑپ گئی ہے یہ کہہ رہی ہے کہ ہائے بابا
حسین دُنیا سے جا چُکے ہیں ہمارے نزدیک کیا رہا ہے
یہ دشتِ وحشت ۔۔۔۔۔


ye dashte wehshat ye shame ghurbat
ye kaun darya se aa raha hai

hai ali ki beti hai taygh parda jalaal chehre pe cha raha hai
ye dashte wehshat....

jalay paday ek taraf hai qaime hai ek taraf bekason ki zaari
hai godiyon may bilakte bache saman wo unko dara raha hai
ye dashte wehshat....

bahot se sadme utha chuke hai nayeef aur zaar ho gaye hai
hai saamne warison ke laashe ye gham tunko bahot kha raha hai
ye dashte wehshat....

us aane waale pe sab hai hairan ke uske aane ka kya hai maqsad
ye aur kya loot lega aakar yahan bhala kya dhara raha hai
ye dashte wehshat....

idhar ye sab baithe sochte hai udhar wo badta hai badne wala
sawaar aske safayd pe hai niqaab se rukh chupa raha hai
ye dashte wehshat....

ali ki beti ye poochti hai us aane wale ki hai gharaz kya
magar wo khamosh hoke rehwaar ab na aagay bada raha hai
ye dashte wehshat....

ghazab ke aalam may keh rahi hai ke badne wale zara sambhalja
mai binte [khilla shikan] hoo tu sunle mujhe bhala tu dara raha hai
ye dashte wehshat....

wo aane wala niqaab ulat kar ye keh raha hai ke dekh zainab
ye baap tera hai meri beti teri hifazat ko aa raha hai
ye dashte wehshat....

ye sunke zainab tadap gayi hai ye keh rahi hai ke haye baba
hussain dunya se jaa chuke hai hamare nazdeek kya raha hai
ye dashte wehshat....
Noha - Ye Dashte Wehshat

Nohaqan: Mirza Sikander Ali
Download Mp3
Listen Online