یا علی ادرکنی
اُمِ لیلٰی کا جگر ہو گیا چھلنی چھلنی
دیکھیئے سینہِ اکبر میں ہے برچھی کی انی
یا علی ادرکنی

دیکھیئے دیکھیئے دم ٹوٹ رہا ہے کس کا
ہے قیامت برپا
خیمہِ عطرتِ اطہار میں ہے سینہ زنی
یا علی ادرکنی

سر جھکائے ہوئے بیٹھے ہیں سرہانے سرور
جاں بلب ہے اکبر
ہائے مظلوم کی کیسی ہے غریبُ الوطنی
یا علی ادرکنی

خیمہِ شاہ میں غُل ہوتا ہے اِنا لِللہ
دمِ آخر ہے آہ
ہچکیاں لیتا ہے ہمشکلِ رسولِ مدنی
یا علی ادرکنی

خاک میں ملتی ہے اکبر کی جوانی مولا
کہہ رہی ہے فضہ
مل گیا خاک میں شبیر کا سر بے چمنی
یا علی ادرکنی

لاشِ اکبر پہ عجب مادرِ اکبر کا ہے حال
حال سے ہے بے حال
روتے روتے وہ کہیں جان نہ دے دے اپنی
یا علی ادرکنی

یہ ضعیفی یہ جواں لال کی میت مولا
کیسے اُٹھے گی بھلا
آئو امداد کو اب بحرِ رسولِ مدنی
یا علی ادرکنی


ya ali adrikni
umme laila ka jigar hogaya chalni chalni
dekhiye seenaye akbar may hai barchi ki ani
ya ali adrikni

dekhiye dekhiye dam toot raha hai kis ka
hai qayamat barpa
qaimaye itrat e athaar may hai seena zani
ya ali adrikni

sar jhukaye hue baithe hai sarane sarwar
jan balab hai akbar
haye mazloom ki kaisi hai ghareeb ul watani
ya ali adrikni

qaimaye shah may ghul hota ha innal lil laah
dum e aakhir hai aah
hichkiyan leta hai humshakle rasool e madani
ya ali adrikni

khaak may milti hai akbar ki jawani maula
keh rahi hai fizza
milgaya khaak may shabbir ka sar be chamani

laashe akbar pe ajab madare akbar ka hai haal
haal se hai behaal
rote rote wo kahin jaan na dede apni
ya ali adrikni

ye zaeefi ye jawan laal ki mayyat maula
kaise uthegi bhala
aao imdad ko ab behre rasool e madani
ya ali adrikni
Noha - Ya Ali Adrikni

Nohaqan: Sachey Bhai
Download Mp3
Listen Online