وہ تین دن کی پیاس وہ تشنہ لبوں کی شام
اپنے گھروں سے دور وہ ان بے گھروں کی شام

بیوائوں کی یتیموں کی اور قیدیوں کی شام
دروں کی تازیانوں کی اور خنجروں کی شام
وہ تین دن کیا پیاس

بے سایہے آسمان وہ مقتل گرم ریت
صحرائے بے اماں میں وہ خستہ تنوں کی شام
وہ تین دن کیا پیاس

خیموں کے ارد گرد وہ لاشے عزیزوں کے
اور دشت کربلا میں وہ ان بے سروں کی شام
وہ تین دن کیا پیاس

لے جائے کون ان کا لہو بستیوں کی سمت
پھیلی یہ سارے شہر میں اب دشمنوں کی شام
وہ تین دن کیا پیاس

اصغر تمہاری یاد میں ہم سب ہیں اشک بار
بی بی سکینہ دیکھئے یہ آنسوئوں کی شام
وہ تین دن کیا پیاس

وہ گیارہویں کے چاند کی افسردہ روشنی
بالوں سے منہ چھپائے وہ شہزادیوں کی شام
وہ تین دن کیا پیاس


wo teen din ki pyas wo tashna labon ki shaam
apne gharon se door wo un begharon ki shaam

bewaon ki yateemon ki aur qaidiyon ki shaam
durron ki taziyano ki aur khanjaron ki shaam
wo teen din....

besaaya aasmaan wo maqtal garm rayt
sehra e be-ama may wo khastaton ki shaam
wo teen din....

qaimon ke ird gird wo laashe azizon ke
aur dashte karbala may wo un besaron ki shaam
wo teen din....

lejaye kaun inka lahoo bastiyon ki samt
phaili ye saare shehr may ab dushmano ki shaam
wo teen din....

asghar tumhari yaad may hum sab hai ashqbaar
bibi sakina dekhiye ye aansoon ki shaam
wo teen din....

wo gyaarveen ke chaand ki afsurda roshni
balon se moo chipaye wo shehzadiyon ki shaam
wo teen din....
Noha - Wo Teen Din Ki Pyas

Nohaqan: Ali Zia Rizvi
Download Mp3
Listen Online