وغا کو عباس آ رہے ہیں
زمیں کا بڑھتا ہوا تذلذل
فلک کو جھولا جُھلا رہا ہے

نشانِ احمد مٹانے والے
بُجھے چراغوں کا نور دے کہ
انہی چراغوں سے لو لگا کر
چراغ زینت بڑھا رہا ہے
وغا کو عباس۔۔۔

یزیدیت کا نظام برہم
حُسینیت کا بلند پرچم
گِرا رہا ہے اسے دو عالم
اسے زمانہ اُٹھا رہا ہے
وغا کو عباس ۔۔۔

حبیب و مسلم کے تیوروں میں
مچل رہی ہے نئی جوانی
الٰہی میدانِ کربلا میں
شباب کس کس پہ آ رہا ہے
وغا کو عباس ۔۔۔

یہی نتیجہ ہے ہر بلا کا
یہی خُلاصہ ہے کربلا کا
جو مر رہا ہے وہ جی رہا ہے
جو سو رہا ہے وہ پا رہا ہے
وغا کو عباس ۔۔۔

کسی بشر میں کہاں یہ قُدرت
یہ ظُلم سہہ کر رہے یہ ہمت
ضعیف ٹوٹی کمر کو کس کر
جواں کا لاشہ اُٹھا رہا ہے
وغا کو عباس ۔۔۔

حبیب کوفے سے چل کہ آئے
سپاہِ شامی میں حُر بھی نکلا
اِدھر اُدھر سے ہر ایک ذرا
سمٹ کہ منزل پہ آ رہا ہے
وغا کو عباس ۔۔۔

حُسین رُخصت کو گھر میں آئے
کہ قتل گاہِ وفا کو جائے
ادھر سکینہ پُکارتی ہے
اُدھر مدینہ بُلا رہا ہے
وغا کو عباس ۔۔۔۔۔


wegha ko abbas aa rahe hai
zameen ka badtha hua tazalzul
falak ko jhoola jhula raha hai

nishane ahmed mitane wale
bujhe charagho ka noor deke
inhi charagho se lau laga kar
charaghe zeenat badha raha hai
wegha ko abbas....

yazeediyat ka nizam barham
hussainiat ka baland parcham
gira raha hai usay do aalam
isay zamana utha raha hai
wegha ko abbas....

habeeb o muslim ke tevaron may
machal rahi hai nayi jawani
elaahi maidan e karbala may
shabab kis kis pe aa raha hai
wegha ko abbas....

yehi nateeja hai har bala ka
yehi khulaasa hai karbala ka
jo mar raha hai wo jee raha hai
jo so raha hai wo pa raha hai
wegha ko abbas....

kisi bashar may kahan ye khudrat
ye zulm seh kar aray ye himmat
zaeef tooti kamar ko kas kar
jawan ka laasha utha raha hai
wegha ko abbas....

habeeb koofe se chal ke aaye
sipahe shaami may hur bhi nikla
idhar udhar se har ek zarra
simat ke manzil pe aa raha hai
wegha ko abbas....

hussain ruqsat ko ghar may aaye
ke qatl-gaahe wafa ko jaaye
idhar sakina pukaarti hai
udhar madina bula raha hai
wegha ko abbas....
Noha - Wegha Ko Abbas

Nohaqan: Sachey Bhai
Download Mp3
Listen Online