تجھے جھُولا جھُلائوں میں تجھے جھُولا جھُلائوں
میں خواب میں اصغر تجھے لوری بھی سُنائوں

لوٹ آئو سفر سے کہ بڑی دیر ہوئی ہے
بیتاب ہوں کب سے تجھے سینے سے لگائوں
تجھے جھُولا جھُلائوں ۔۔۔

کوئی مجھے بتلاتا نہیں تیری نشانی
برسات میں تیروں کی کہاں ڈھونڈنے جائوں
تجھے جھُولا جھُلائوں ۔۔۔

سوچا تھا تیری سالگرہ ہر میں کروں گی
تقدیر یہ کہتی ہے تیرا سوگ منائوں
تجھے جھُولا جھُلائوں ۔۔۔

بابا سے تیرے تیراجنازہ نہ اُٹھے گا
رُک جا ذرا عباس کو دریا سے بلائوں
تجھے جھُولا جھُلائوں ۔۔۔

یہ خون بھرا کُرتا یہ مٹی میں بھرے بال
سینے میں چھُپائوں کہ میں آنکھوں سے لگائوں
تجھے جھُولا جھُلائوں ۔۔۔

اس طرح کوئی روٹھ کے ماں سے نہیں جاتا
تُو خود ہی بتا دے میں تجھے کیسے منائوں
تجھے جھُولا جھُلائوں ۔۔۔

ریحان کے نوحے پہ صدا بانو کی آئی
میں آنکھوں سے اشکوں کے سمندر کو بہائوں
تجھے جھُولا جھُلائوں ۔۔۔


tujhe jhula jhulaaun mai tujhe jhula jhulaaun
mai khaab may asghar tujhe lori bhi sunaaun

laut aao safar se ke badi dayr hui hai
betaab hoo kabse tuhjhe seene se lagaaun
tujhe jhula jhulaaun....

koi mujhe batlata nahi teri nishani
barsaat may teero ki kahan dhoondne jaaun
tujhe jhula jhulaaun....

socha tha teri saalgira ghar may hi karungi
taqdeer ye kehti hai tera soag manaaun
tujhe jhula jhulaaun....

baba se tere tera janaza na uthega
rukja zara abbas ko darya se bulaaun
tujhe jhula jhulaaun....

ye khoon bhara kurta yeh matti may bhare baal
seene may chupaun ke mai aankhon se lagaaun
tujhe jhula jhulaaun....

is tarha koi rooth-ke maa se nahi jaata
tu khud bata-de mai tujhe kaise manaaun
tujhe jhula jhulaaun....

rehaan ke nowhe pe sada bano ki aayi
mai aankhon se ashkon ke samandar ko bahaaun
tujhe jhula jhulaaun....
Noha - Tujhe Jhula Jhulaun
Shayar: Rehaan Azmi
Nohaqan: Hasan Sadiq
Download Mp3
Listen Online