تو لمیازالو لمیازل ہے عادل و قدیم ہے
صغیر ہے خبیر ہے حسیب ہے کریم ہے
جلیل ہے نبیل ہے قریب ہے علیم ہے
خدائے ذولجلال تیرا اعتبار ہے حسین
زمین پر ضمیر و ظرف کی پکار ہے حسین

میرے خدا تیرا نبی حبیب و صادق و امین
بساط کائنات پر وہ تاجدار مرسلین
وہی ہے نور اولی وہی ہے عقل اولی
اسی رسول حق کے دین کا حصار ہے حسین
سجی ہے جس سے بزم کون وہ زر نگار ہے حسین

حبیب کردیگار کا شریک کار مرتظی
کہ جس کی نسل میں چلا ہدایتوں کا سلسلہ
کوئی اسے ولی کہے کوئی اسے کہے خدا
اسی علی کی بے نیام ذوالفقار ہے حسین
جو موت پر جھپٹ پڑے وہ شہسوار ہے حسین

علی کے گھر کی زیب و زین غم گسار فاطمہ
وہ شامی موباہیلا اور مرکز کسا
فراق پہ اپنے حق کو جس نے بے جھجک طلب کیا
اسی بتول کا سکون ہے قرار ہے حسین
اسی کی تربیت کا ایک شاہکار ہے حسین

وہ سیدہ کی پرورش کا ایک آئینہ حسن
علی شیر مصطفی مزاج تیرگی شکن
کجا امیر شام اور کجا امام کم سخن
اسی حسن کے صبر و زبط کا نکھار ہے حسین
شدید حبس میں ہوائے خوشگوار ہے حسین

حسن ایک ساتھ آئے حسین تو بھی سید عرب
فضیلتوں کے باب میں ہے تو بھی ہاشمی لقب
حسین سب سے معتبر تیری شجرہ نقب
صدف سے جو بھی ہے گوہر وہ آبدار ہے حسین
کہ تیرا کہاں وعدہ سب سے شاندار ہے حسین

حسین کل پیامبروں کی محنتوں کا نام ہے ہے
حسین سے اذان ہے سجود ہے قیام ہے
حسین تجھ پہ حشر تک درود ہے سلام ہے
نظام دہر کا تجھی پہ انحصار ہے حسین
مشئیت خدا پہ تجھ کو اختیار ہے حسین

حسین تیری ٹھوکروں میں مسند یزید ہے
حسین تیرے غم میں جس نے جان دی شہید ہے
حسین تیرا منحرف لعین ہے پلید ہے
جہاں میں نسل شیمر اب بھی برقرار ہے حسین
کہ جس کو تیری تذکرہ بھی ناگوار ہے حسین

چلی جو تیری تیغ کفر منہ چھپا کے رہ گیا
یوم فرات میں ملوکیت کا قصر بہہ گیا
ضمیر مفتیاں دین فروش بھی یہ کہہ گیا
پیامبرانہ عظمتوں کا ورثہ دار ہے حسین
بنائے لا الا دین کردیگار ہے حسین

سبیل تازیے علم جلوس ماتم عزا
مجال ہے جو رک سکے یہ مجلسوں کا سلسلہ
سبب اس اہتمام کا فقط دعا سیدہ
ہر ایک بارگاہ تیری یادگار ہے حسین
زمین پر ہر دیار اب تیرا دیار ہے حسین

یزیدیت کو روند کر بسائی تو نے کربلا
لہو کی بوند بوند پر بنائی تو نے کربلا
متائے تشنگی لئے سجائی تو نے کربلا
ہر ایک ذہن حر پہ تیری اقتدار ہے حسین
قدم قدم پہ صبر تیرا آشکار ہے حسین

صبیح مصطفی کے قلب میں سنہ اتر گئی
کٹے جو بازوئے جاری تو آلقامہ بھی رو پڑی
چلا جو نواک ستم تو زندگی لرز اٹھی
تیرے لبوں پہ پھر بھی شکر کردیگار ہے حسین
بریدہ سر بلند ہو کہ باوقار ہے حسین

تیرے قیام جل گئے نبی کا گھر اجڑ گیا
جلا کسی کا پیرہن کسی کی چھن گئی ردا
مسافرت کے دشت میں لٹا ہوا وہ قافلہ
کسی یتیم کو چاچا کا انتظار ہے حسین
وہ کون ہے جو قافلے کا ذمہ دار ہے حسین

وہ کربلا سے شام جا رہا ہے کوئی کارواں
وہ گیسوئوں سے منہ چھپائے تشنہ کم بیبیاں
گلے میں طوق خاردار اور امام آنسو جاں
کہ تیرے لخت دل پہ ایک یہ بھی بار ہے حسین
نہ کوئی دوست ہے نہ کوئی غم گسار ہے حسین

مصیبتیں گزر گئیں صعوبتیں گزر گئیں
بیاں نہ ہو سکے کبھی جو آفاتیں گزر گئیں
نبی کے اہل بیعت پر قیامتیں گزر گئیں
انی سبب یہ کائنات سوگوار ہے حسین
یہی نوائے شاہد جگر فگار ہے حسین


tu la-yazalo lamyazal hai aadil-o-qadeem hai
sagheer hai khabeer hai  haseeb hai kareem hai
jaleel hai nabeel hai qareeb hai aleem hai
khuda-e-zuljalaal tera aytebaar hai hussain
zameen par zameer-o-zarf ki pukar hai hussain

mere khuda tera nabi habeeb-o-sadiq-o-ameen
bisaat-e-kayanat par wo tajdaar-e-mursalin
wohi hai noor-e-awwali wohi hai aql-e-awwali
usi rasool-e-haq ke deen ka hisar hai hussain
saji hai jisse bazm-e-kun woh zar nigar hai hussain

habib-e-kirdigar ka shareek-e-kaar murtuza
ke jis ki nasl may chala hidayato ka silsila
koi usay wali kahey koi usay kahey khuda
usi ali ki be-niyam zulfiqar hai hussain
jo maut par jhapat padey woh shehsawar hai hussain

ali ke ghar ki zaib-o-zain gham gusar fatima
woh shaami-e-mubahila bhi aur markaz-e-kisa
fidak pe apne haq ko jis ne be-jhijhak talab kiya
usi batool ka sukoon hai qaraar hai hussain
usi ki tarbiyat ka ek shaahkar hai hussain

woh syyeda ki parwarish ka ek aaina hassan
ali she-aar mustufa mizaaj teergi shikan
kuja ameer-e-shaam aur kuja imam-e-kam sukhan
usi hassan ke sabr-o-zabt ka nikhar hai hussain
shadeed habs may hawaye khushgawar hai hussain

hassan ek saath ay hussain tu bhi syed-e-arab
fazeelaton ke baab may hai tu bhi haashmi laqab
hussain sab say mo'tabar hai tera shajra-e-naqab
sadaf say jo bhi hai guhar wo aabdar hai hussain
ke tera khaan wada sab se shandar hai hussain

hussain kul payambaro ki mehnato ka naam hai
hussain se azaan hai sujud hai qayam hai
hussain tujh pe hashr tak durood hai salaam hai
nizaam-e-dohr ka tujhi pa inhisar hai hussain
mashiat-e-khuda pa tujh ko ikhtiyar hai hussain

hussain teri thokaro may masnad-e-yazeed hai
hussain tere gham may jis ne jaan di shaheed hai
hussain tera munharif laeen hai paleed hai
jahan may nasl-e-shimr ab bhi barqarar hai hussain
ke jisko tera tazkira bhi nagawar hai hussain

chali jo teri teygh kufr moo chupa ke rehgaya
yame furaat may mulukiyat ka qasr beh gaya
zameer-e-muftiyane deen farosh bhi ye kehgaya
payambarana azmato ka wirsadar hai hussain
bana-e-la ilaha deen-e-kirdigar hai hussain

sabil taziye alam  juloos-o-matame aza
majal hai jo ruk sakay ye majliso ka silsila
sabab is ehtimam ka faqat dua-e-syeda
har ek bargaah teri yadgaar hai hussain
zameen par har deyar ab tera deyar hai hussain

yazidiyat ko rond kar basayi tune karbala
lahoo ki boond boond par banayi tune karbala
mata-e-tishnagi liye sajayi tune karbala
har ek zehn-e-hur pe tera iqtedaar hai hussain
qadam qadam pe sabr tera ashkaar hai hussain

shabeeh-e-mustafa ke qalb may sina utar gayi
katey jo bazuey jari to alqama bhi ro padi
chala jo naawak-e-sitam to zindagi laraz uthi
tere labo pe phir bhi shukr-e-kirdigaar hai hussain
bureedah sar buland ho ke bawaqaar hai hussain

tere qayam jal gaye nabi ka ghar ujad gaya
jala kisi ka payrahan kisi ki chin gayi rida
musafirat k edasht may luta hua woh qaafila
kisi yateem ko chacha ka intezar hai hussain
woh kaun hai jo khaaflay ka zimmedaar hai hussain

wo karbala se shaam jaa raha hai koi karwan
wo gaysuwo se moo chupaye tashnakaam bibiyan
galey may tauq-e-khaardar aur imam-e inso-jaan
ke tere lakht-e-dil pa ek ye bhi baar hai hussain
na koi dost hai na koi ghamgusaar hai hussain

museebatein guzar gayi saubatain guzar gayi
bayan na ho sakay kabhi jo aafatay guzar gayi
nabi ke ahle bayt par qayamatay guzar gayi
isi sabab ye kaayanat sogwar hai hussain
yehi nawey shahid-e-jigar figaar hai hussain
Noha - Tu La-Yazalo Lam-Yazal
Shayar: Shahid Jafer
Nohaqan: Ali (Anjuman Hyderi Ali Basti)
Download mp3
Listen Online