تھے بین سکینہ کے عباس نہیں آئے
دریا پہ گئے ایسے عباس نہیں آئے

ایسا تو نہ ہوتا تھا جب تک تھے مدینے میں
کیا کرب و بلا آئے عباس نہیں آئے
تھے بین سکینہ کے۔۔۔۔۔

اک میں ہی نہ تھی پیاسی بچے بھی تو پیاسے تھے
کیوں روٹھ گئے مجھ سے عباس نہیں آئے
تھے بین سکینہ کے۔۔۔۔۔

پنچھی ہو کے مانوس ہو ہر شام پلٹتے ہیں
کیا بات خدا جانے عباس نہیں آئے
تھے بین سکینہ کے۔۔۔۔۔

کہہ دے کوئی صغریٰ سے ہم بھُولے نہیں تجھ کو
ہم کب کے گھر آ جاتے عباس نہیں آئے
تھے بین سکینہ کے۔۔۔۔۔

اب چادرِ زینب کا اللہ محافظ ہے
پردے کے ضامن تھے عباس نہیں آئے
تھے بین سکینہ کے۔۔۔۔۔

بیمار بھتیجے پر ننھی سی بھتیجی پر
کیا کیا نہ ستم ٹُوٹے عباس نہیں آئے
تھے بین سکینہ کے۔۔۔۔۔

دربار کی آرائش اور قیدی رسن بستہ
چوبیس پہاڑ گزرے عباس نہیں آئے
تھے بین سکینہ کے۔۔۔۔۔

کچھ یاد نہیں آتا ایسا بھی ہوا سبطِ
جعفر کے بُلانے سے عباس نہیں آئے
تھے بین سکینہ کے۔۔۔۔۔


thay bain sakina ke abbas nahi aaye
darya pa gaye aise abbas nahi aaye

aisa to no hota tha jab tak thay madine may
kya karbobal aaye abbas nahi aaye
thay bain sakina ke....

ek mai hi na thi pyasi bache bhi to pyase thay
kyun rooth gaye mujhse abbas nahi aaye
thay bain sakina ke....

panchi ho ke manoos ho har shaam palat-te hai
kya baat khuda jaane abbas nahi aaye
thay bain sakina ke....

kehde koi sughra se hum bhoole nahi tujhko
hum kabke ghar aajate abbas nahi aaye
thay bain sakina ke....

ab chadare zainab ka allah muhafiz hai
parde ke ko zaamin thay abbas nahi aaye
thay bain sakina ke....

bemaar bhatije par nanhi si bhatiji par
kya kya na sitam toote abbas nahi aaye
thay bain sakina ke....

darbar ki aarayish aur qaidi rasan basta
chaubees pahar guzre abbas nahi aaye
thay bain sakina ke....

kuch yaad nahi aata aisa bhi hua sibte
jafar ke bulane se abbas nahi aaye
thay bain sakina ke....
Noha - Thay Bain Sakina Ke
Shayar: Ustad Sibte Jafar
Nohaqan: Ustad Sibte Jafar
Download Mp3
Listen Online