ہائے زہرا تیری تنہائی ہے تنہائی علی کی

ہائے غم میں تیرے جاتی رہی بینائی علی کی
تیری تنہائی ہے تنہائی علی کی

دربار میں ظالم کے گئی بنتِ پیعمبر
کیا وقت تھا کچھ کر نہ سکا فاتح خیبر
ہائے ہنستے رہے غربت پہ تماشائی علی کی
تیری تنہائی ہے۔۔۔۔۔

پیغام ِ ولایت لیے گھر گھر گئی زہرا
شوہر کے لیے ڈھال تھی جب تک رہی زندہ
ہائے دُنیا کو بتاتی رہی سچائی علی کی
تیری تنہائی ہے۔۔۔۔۔

کہتے تھے علی زہرا سے کیا حال ہے بی بی
اب ہم کو سلام آ کے بھی کرتا نہیں کوئی
ہائے ہے بعدِ نبی کیسی پزیرائی علی کی
تیری تنہائی ہے۔۔۔۔۔

در جلتا ہوا فاطمہ زہرا پہ گرایا
محسن کی شہادت کا سبب بن گئی دُنیا
ہائے تصویر مکمل نہیں ہو پائی علی کی
تیری تنہائی ہے۔۔۔۔۔

باہر کبھی حجرے میں کبھی قبرِ نبی پر
ہر رات کی تاریکی میں اولاد سے چھُپ کر
ہائے نکلی ہے تجھے ڈھونڈنے بینائی علی کی
تیری تنہائی ہے۔۔۔۔۔

زہرا کی جُدائی کو لگائے ہوئے دل سے
پچیس برس مولا نے چُپ چاپ گُزارے
ہائے اک حجرے میں کُل دُنیا سمٹ آئی علی کی
تیری تنہائی ہے۔۔۔۔۔

اُس وقت تکلم وہ زمانے کا ولی تھا
سجاد جو زینب کو لیے شام سے گُزرا
ہائے اسلام کو خاموشی بچا لائی علی کی
تیری تنہائی ہے۔۔۔۔۔


haye zehra teri tanhai hai tanhai ali ki

haye gham may tere jaati rahi beenayi ali ki
teri tanhai hai tanhai ali ki

darbar may zaalim ke gayi binte payambar
kya waqt tha kuch kar na saka faatahe khyber
haye haste rahe ghurbat pe tamashayi ali ki
teri tanhai hai....

paighame wilayat liye ghar ghar gayi zehra
shohar ke liye dhaal thi jab tak rahi zinda
haye dunya ko batati rahi sachayi ali ki
teri tanhai hai....

kehte thay ali zehra se kya haal hai bibi
ab hum ko salam aake bhi karta nahi koi
haye hai baade nabi kaisi pazeerayi ali ki
teri tanhai hai....

dar jalta hua fatema zehra pe giraya
mohsin ki shahadat ka sabab bangayi dunya
haye tasveer mukammal nahi ho payi ali ki
teri tanhai hai....

baahar kabhi hujre may kabhi qabre nabi par
har raat ki tareeki may aulaad se chup kar
haye nikli hai tujhe dhoondne beenayi ali ki
teri tanhai hai....

zahra ki judai ko lagaye hue dil se
pachees baras maula ne chup chaap guzare
haye ek hujre may kul dunya simat aayi ali ki
teri tanhai hai....

us waqt takallum wo zamane ka wali tha
sajjad jo zainab ko liye shaam se guzra
haye islam ko khamoshi bacha laayi ali ki
teri tanhai hai....
Noha - Tanhai Ali Ki
Shayar: Mir Takallum
Nohaqan: Shahid Baltistani
Download Mp3
Listen Online