صغریٰ کو رُلاتا ہے یہ چاند محرم کا
جب سامنے آتا ہے یہ چاند محرم کا
صغریٰ کو رُلاتا ہے۔۔۔

ہم صورتِ زہرا سے بھائی کے بچھڑنے کی
خاتونِ قیامت سے گھر بار اُجڑنے کی
روداد سُناتا ہے یہ چاند محرم کا
صغریٰ کو رُلاتا ہے۔۔۔

کاٹا ہے گلا لوگو سہ روز کے پیاسے کا
پامال ہوا لاشہ احمد کے نواسے کا
ہر ایک کو بتاتا ہے یہ چاند محرم کا
صغریٰ کو رُلاتا ہے۔۔۔

تصویر دکھاتا ہے احمد کی جوانی کی
ہر شخص کو دُنیا میں کربلا کی کہانی کی
تفسیر بتاتا ہے یہ چاند محرم کا
صغریٰ کو رُلاتا ہے۔۔۔

کربلا کی زیارت کو جو آنکھ تڑپتی تھی
شبیر تیرے غم میںجو آنکھ برستی تھی
اُس آنکھ کوبھاتا ہے یہ چاند محرم کا
صغریٰ کو رُلاتا ہے۔۔۔

عمران کو شبر کو خاتونِ قیامت کو
حیدر کی قسم مظہر سرکارِ رسالت کو
تُربت میں رُلاتا ہے یہ چاند محرم کا
صغریٰ کو رُلاتا ہے۔۔۔


sughra ko rulata hai ye chand muharram ka
jab saamne aata hai ye chand muharram ka
sughra ko rulata hai....

hum surate zehra se bhai ke bichadne ki
khaatun-e-qayamat se ghar baar ujadne ki
rudaad sunata hai ye chand muharram ka
sughra ko rulata hai....

kaata hai gala logo seh roz ke pyaase ka
pamaal huva laasha ahmed ke nawase ka
har ek ko batata hai ye chand muharram ka
sughra ko rulata hai....

tasveer dikhata hai ahmed ki jawani ki
har shaks ko duniya may karbal ki kahani ki
tafsir batata hai ye chand muharram ka
sughra ko rulata hai....

karbal ki ziyarat ko jo aankh tadapti thi
shabbir tere gham me ko aankh baras-ti thi
us ankh ko bhaata hai ye chand muharram ka
sughra ko rulata hai....

imran ko shabbar ko khaatun-e-qayamat ko
hyder ki kasam mazhar sarkare risaalat ko
turbat may rulata hai ye chand muharram ka
sughra ko rulata hai....
Noha - Sughra Ko Rulaata
Shayar: Mazhar
Nohaqan: Hasan Sadiq
Download Mp3
Listen Online