سُونا ہے مدینہ، سُونا ہے مدینہ

عاشور کو آیا یہ خطِ فاطمہ صغریٰ ،سُونا ہے مدینہ
کب لوٹ کے گھر آئو گے یا شاہِ مدینہ
سُونا ہے مدینہ،عاشور کو آیا۔۔۔

میں در پہ کھڑی رہتی ہوں اک آس لگائے، بھّیا نہیں آئے
شکوہ نہیں اکبر سے ہے تقدیر سے شکوہ
سُونا ہے مدینہ،عاشور کو آیا۔۔۔

دو دن سے میرے حلق سے پانی نہیں اُترا، قربان ہو صغریٰ
دل کہتا ہے پردیس میں تم پیاسے ہو بابا
سُونا ہے مدینہ،عاشور کو آیا۔۔۔

پردیس میں بھّیا ہو اگر بیاہ تمہارا، ارمان ہے میرا
باندھے ہوئے سہرا میری تُربت پہ بھی آنا
سُونا ہے مدینہ،عاشور کو آیا۔۔۔

میں راتوں کو سوتی ہوں تو جاگ اُٹھتی ہوں اکثر، کیا بات ہے آخر
بکھرائے ہوئے بال نظر آتی ہے زہرا
سُونا ہے مدینہ،عاشور کو آیا۔۔۔

اک شیشے میں کچھ خاک لیے پھرتی ہے دادی، اور کرتی ہے زاری
مظلوم حسینا میرے مظلوم حسینا
سُونا ہے مدینہ،عاشور کو آیا۔۔۔

اماں کی بھری گود رہے مانگ نہ اُجڑے، خالق سے دُعا ہے
یا رب میرے بے شیر کا آباد ہو جھولا
سُونا ہے مدینہ،عاشور کو آیا۔۔۔

خط پڑھ کے حسین ابنِ علی خوب سا روئے، اور سر کو جھُکائے
قاصد کے قریب رکھ دیا اک ننھا سا لاشہ
سُونا ہے مدینہ،عاشور کو آیا۔۔۔


soona hai madina, soona hai madina

ashoor ko aaya ye khathe fatima sughra, soona hai madina
kab laut ke ghar aaoge ya shahe madina
soona hai madina, ashoor ko aaya....

mai dar pe khadi rehti hoo ek aas lagaaye, bhaiya nahi aaye
shikwa nahi akbar se hai taqdeer se shikwa
soona hai madina, ashoor ko aaya....

do din se mere halq se pani nahi uthra, qurban ho sughra
dil kehta hai pardes may tum pyase ho baba
soona hai madina, ashoor ko aaya....

pardes may bhaiya ho agar byah tumhara, armaan hai mere
baandhe huwe sehra meri turbat pe bhi aana
soona hai madina, ashoor ko aaya....

mai rathon ko soti hoon to jaag ut-thi hpon aksar,
kya baat hai aakhar
bhikraye huwe baal nazar athi hai zehra
soona hai madina, ashoor ko aaya....

ek sheeshe may kuch khaak liye phirti hai daadi, aur karthi hai zaari
mazloom hussaina mere mazloom hussaina
soona hai madina, ashoor ko aaya....

amma ki bhari godh rahe maang na ujde, khaliq se duwa hai
ya rab mere bayheer ka abaad ho jhoola
soona hai madina, ashoor ko aaya....

khat padke hussain ibne ali khoob sa roye, aur sar ko jhukaye
qasid ke khari rakh diya ek nanha sa laasha
soona hai madina, ashoor ko aaya....
Noha - Soona Hai Madina

Nohaqan: Askar Ali Khan
Download Mp3
Listen Online