شام شام شام کی تاریکی میں نوری لشکر لے کر چلتا ہے
کرب و بلا کے غم کا سورج ڈھلتا ہے نہ بُجھتا ہے

تم بھی پُکارو شیرِ خُدا کو تم کو بھی معلوم تو ہو
کیسے مشکل حل ہوتی ہے کیسے کام نکلتا ہے
شام شام شام ۔۔۔۔۔

جب بھی تیری پیاس کی شدت سُنتے ہیں ہم اہلِ اعزا
خون برستا ہے آنکھوں سے دل سینے میں جلتا ہے
شام شام شام ۔۔۔۔۔

اُس موتی کا نام ہے گوہر کہتی ہے تاریخِ اعزا
قطرئہ خون جب آنکھ میں بہہ کر فرشِ اعزا میں ڈھلتا ہے
شام شام شام ۔۔۔۔۔


sham sham sham ki tareeki may noori lashkar lekar chalta hai
karbobala ke gham ka suraj dhalta hai na bhujta hai

tum bhi pukaro shere khuda ko tumko bhi maloom to ho
kaise mushkil hal hoti hai kaise kaam nikalta hai
sham sham sham....

jab bhi teri pyas ki shiddat sunte hai hum ahle aza
khoon barasta hai aankhon se dil seene may jalta hai
sham sham sham....

us moti ka naam hai gohar kehti hai tareekhe aza
khatrae khoon jab aankh may behkar farshe aza may dhalta hai
sham sham sham....
Noha - Sham Sham Sham
Shayar: Gohar
Nohaqan: Tableeq e Imamia (Nazim Hussain)
Download Mp3
Listen Online