شبیر سے محبت ہے مجھ کو
عشقِ شبیر میری دولت ہے
مجھ کو شبیر سے ۔۔۔

سارا عالم بنا ہوا ہے یزید
ایک شبیر کی ضرورت ہے
مجھ کو شبیر سے ۔۔۔

ابو طالب پہ کُفر کا الزام
یہ فقط جذبہِ رقابت ہے
مجھ کو شبیر سے ۔۔۔

دینِ حق میں ملوکیت کا شمول
نسلِ سفیان کی شرارت ہے
مجھ کو شبیر سے ۔۔۔

کر گئی پھر حبیب شِہ کو جوان
کتنی معجز نما محبت ہے
مجھ کو شبیر سے ۔۔۔

اس کو نیزہ نہ ما ابنِ انس
تیری زد پر نبی کی صورت ہے
مجھ کو شبیر سے ۔۔۔

کیسے اُٹھے گی لاش اکبر کی
باپ بوڑھا جواں کی میت ہے
مجھ کو شبیر سے ۔۔۔

رکھ لی ٹوٹی کمر پہ لاشِ جوان
شاہِ دین آپ ہی کی ہمت ہے
مجھ کو شبیر سے ۔۔۔

رن سے آتی ہے لاش اکبر کی
خیمہِ شِہ میں قیامت ہے
مجھ کو شبیر سے ۔۔۔

آ رہی ہے چچا چچا کی صدا
قید خانے میں کس کی تُربت ہے
مجھ کو شبیر سے ۔۔۔


shabbir se mohabbat hai mujhko
ishqe shabbir meri daulat hai
mujhko shabbir se....

saara aalam bana hua hai yazeed
ek shabbir ki zaroorat hai
mujhko shabbir se....

abu talib pe kufr ka ilzaam
ye faqad  jazba e raqabat hai
mujhko shabbir se....

deen e haq may mulookiyat ka shamool
nasl e sufiyan ki shararat hai
mujhko shabbir se....

kargayi phir habeeb e sheh ko jawan
kitni maujiz-numa mohabbat hai
mujhko shabbir se....

isko naiza na maar ibne anas
teri zad par nabi ki surat hai
mujhko shabbir se....

kaise uthaygi laash akbar ki
baap boodha jawan ki mayyat hai
mujhko shabbir se....

rakhli tooti kamar pe laashe jawan
shahe deen aap hi himmat hai
mujhko shabbir se....

ran se aati hai laash akbar ki
qaima e shah may qayamat hai
mujhko shabbir se....

aa rahi hai chacha chacha ki sada
qaidkhane may kiski turbat hai
mujhko shabbir se....
Noha - Shabbir Se Mohabbat Hai

Nohaqan: Sachey Bhai
Download Mp3
Listen Online