صحرائے عتش میں زہرا کا پسر ہے

اللہ تباہی یہ کِسی گھر پہ نہ آئے
ہے کون جو اس وقت مصیبت سے بچائے
شبیر کی تنہائی پہ زینب کی نظر ہے
صحرائے عتش میں ۔۔۔

قاسم ہے نہ اکبر ہے نہ عباس ِ دلاور
حد ہو گئی مارے گئے چھ ماہ کے اصغر
سو داغ ہیں اک دل پہ یہ سرور کا جگر ہے
صحرائے عتش میں ۔۔۔

بس دیکھتے ہی دیکھتے برباد ہوا گھر
نازوں کے پالے سو گئے اقتال کی زمیں پر
حیدر کی دُعائوں کا ثمر خون میں تر ہے
صحرائے عتش میں ۔۔۔

بیووں کو یتیموں کو کرے کس کے حوالے
آفت میں گرفتار ہے سب کس کو سنبھالے
عباس سا بھائی ہے نہ اکبرسا پسر ہے
صحرائے عتش میں ۔۔۔

ہے عصر کا ہنگام گھٹا ظلم کی چھائی
شہہ کہتے تھے رو رو کے ہوئی سب سے جُدائی
آواز کسے دوں میرا غمخوار کدھر ہے
صحرائے عتش میں ۔۔۔


sehra e atash may zehra ka pisar hai

allah tabahi ye kisi ghar pe na aaye
hai kaun jo is waqt musibat se bachaye
shabbir ki tanhai pe zainab ki nazar hai
sehra e atash may....

qasim hai na akbar hai na abbas e dilawar
hadh hogayi maare gaye cheh maah ke asghar
sau daagh hai ek dil pe ye sarwar ka jigar hai
sehra e atash may....

bas dekhte hi dekhte barbaad hua ghar
naazon ke pale sogaye aqtal ki zameen par
hyder ki duaon ka samar khoon may tar hai
sehra e atash may....

bewon ko yateemo ko kare kiske hawale
aafat may giraftaar hai sab kisko sambhale
abbas sa bhai hai na akbar sa pisar hai
sehra e atash may....

hai asr ka hangaam ghata zulm ki chaayi
sheh kehte thay ro ro ke huo sab se judaai
awaaz kise doo mere ghamkhar kidhar hai
sehra e atash may....
Noha - Sehra e Atash May

Nohaqan: Anjumane Aon o Mohd
Download Mp3
Listen Online