سدا رہے گا حُسین کا غم

یہ شورِ گریہ یہ شورِ ماتم
سنی ہوئی داستانِ پیہم
اک آہ بن کر اُبھر رہی ہے
وہ کربلا کی صدائے پُرنم
سدا رہے گا ۔۔۔

اُٹھے جو ظلم و ستم کے جھونکے
سوال یہ تھا کہ کون روکے
حُسین ابنِ علی کے در پر
جمی ہوئی تھی نگاہِ عالم
سدا رہے گا ۔۔۔

بڑھا جو حد سے غرورِ باطل
تڑپ اُٹھا پھر حُسین کا دل
چلا حرم کو وطن سے لے کر
ندائے زینب بنا کہ پرچم
سدا رہے گا ۔۔۔

اصولِ فکر و عمل کو موڑا
یزیدیت کے فسوح کو توڑا
ہر ایک دیوارِ ظلم ڈھا کر
بنا گیا دیں کا قصرِ محکم
سدا رہے گا ۔۔۔

جفائوں کا دل ہلا کہ اُٹھا
جو قبرِ اصغر بنا کہ اُٹھا
جواں کی میت پہ مُسکرا کر
بدل گیا فکرِ نسلِ آدم
سدا رہے گا ۔۔۔

سنبھل کے ٹوکے ہمیں زمانہ
گزر گیا دورِ تعزیانہ
بغور سُن لیں جہان والے
اب اس عالم کے ہیں پاسبان ہم
سدا رہے گا ۔۔۔

نہ رُک سکی ہے نہ رُک سکے گی
اعزائِ مظلوم کیا لٹے گی
دلوں کی ہر اک دھڑکنوں سے
اُبھر رہی ہے صدائے ماتم
سدا رہے گا ۔۔۔


sada rahega hussain ka gham

ye shor e giryan ye shor e matam
suni hui daastan e payham
ek aah bankar ubhar rahi hai
wo karbala ki sada e purnam
sada rahega....

uthay jo zilm o sitam ke jhonke
sawaal ye tha ke kaun roke
hussain ibne ali ke dar par
jami hui thi nigaahe aalam
sada rahega....

bada jo hadh se ghuroor e baatil
tadap utha phir hussain ka dil
chala haram ko watan se lekar
nidaye zainab banake parcham
sada rahega....

usoole fikr o amal ko moda
yazeediyat ke fasooh ko toda
har ek dewaar e zulm dhaakar
bana gaya deen ka qasre mohkam
sada rahega....

jafaon ka dil hila ke utha
jo qabr e asghar bana ke utha
jawan ki mayyat pe muskurakar
badal gaya fikre nasle adam
sada rahega....

sambhal ke tokay hamay zamana
guzar gaya daur taaziyana
ba ghaur sunle jahan waale
ab is alam ke hai paasban hum
sada rahega....

na ruk saki hai na ruk sakegi
aza e mazloom kya lutegi
dilon ki har ek dhadkano se
ubhar rahi hai sadaye matam
sada rahega....
Noha - Sada Rahega Hussain

Nohaqan: Sachey Bhai
Download Mp3
Listen Online