سب جل چکے خیامبکھری ہوئی ہے رات
سسکتا ہے بن تمام
سب جل چکے

سورج کے سر سے کھسکی شب میں ردائے شام

خیموں کو اپنے لوٹ چلی ظلم کی سپاہ
خوں سے زمیں سرخ ہوئی یاد سے سیاہ
اٹھتے ہوئے دھوئیں سے پلٹ ہے سیاہ بام
سب جل چکے

تاریک راستوں سے دھلتے ہیں بے وطن
کانوں میں آرہی ہے صدائیں بے زن بے زن
سب مہربان بھلے سے کہیں چھپ گئی ہے شام
سب جل چکے

قاسم سا نوجواں علی اصغر سا مہہ رو
عباس سا جری علی اکبر سا خوش گلو
کیا کیا چراغ تھے جنہیں روکی رہے گی شام
سب جل چکے

آنکھوں کے سامنے ہی بہا عصر تک لہو
آنکھوں کے سامنے ہی لگائی آگ چار سو
یہ خوں یہ آگ جھیل لی بانو تمہیں سلام
سب جل چکے

آتا ہوا سوار جو دیکھا سوئے خیام
گونجی صدائے دختر زہرائے نیک نام
بابا میرا سلام لو بابا میرا سلام
سب جل چکے

سر کو جھکائے خاک پر بیٹھا ہے ایک جواں
گردن میں طوق پائوں میں لپٹی ہیں بیڑیاں
ہے دل لخت شاہ کی آواز شام شام
سب جل چکے


sab jal chuke qayam bikhri hui hai raat
sisakta hai ban tamam
sab jal....

suraj ke sar se khiski shab may rida-e-shaam

qaimo ko apne laut chuki zulm ki sipah
khoon se zameen surq hui yaad se siyaah
uth-te hue dhuen se palat hai siyaah paam
sab jal....

tareeq raaston se dehelte hai bewatan
kano may aa rahi hai sada-e-bizan bizan
sab mehrban bhale se kahin chup gayi hai shaam
sab jal....

qasim sa nowjawan ali asghar sa maahroo
abbas sa jari ali akbar sa khush guloo
kya kya charaag thay jine roki rahegi shaam
sab jal....

aankhon ke saamne hi baha asr tak lahoo
aankhon ke saamne hi lagi aaj chaarsu
ye khoon ye aag jheylne bano tumhay salaam
sab jal....

aata hua sawaar jo dekha suye qayam
goonji sada-e-dukhtare zehra-e-nayk naam
baba mera salaam lo baba mera salaam
sab jal....

sar ko jhukaye khaakh par baitha hai ek jawaan
gardan may tauq paon se lipti hai bediyan
hai dil laqt e shah ki awaz shaam shaam
sab jal....
Noha - Sab Jal Chuke Qayam

Nohaqan: Ali Zia Rizvi
Download Mp3
Listen Online