سائے میں سیدہ کے اعزادار رہیں گے
جب ہو گا سوا نیزے پہ خورشید و قیامت
سائے میں سیدہ کے اعزادار رہیں گے

بڑھتا ہی چلا جائے گا شبیر کا ماتم
آئے جو غمِ شہہ کے علمدار رہیں گے
سائے میں سیدہ کے۔۔۔

ہم قبر میں سو جائیں گے جب بے خبری سے
ماتم کے نشاں روح میں بیدار رہیں گے
سائے میں سیدہ کے۔۔۔

ہر چیز کو دنیا میں فنا ہونا ہے اک دن
قائم غمِ شبیر کے آثار رہیں گے
سائے میں سیدہ کے۔۔۔

جنت میں اگر مجلسِ شبیر نہ ہو گی
ہم اہلِ اعزا خُلد سے بیزار رہیں گے
سائے میں سیدہ کے۔۔۔

اک بار ذرا نامِ علی لے کے تو دیکھو
مشکل میں مدد گار وہ ہر بار رہیں گے
سائے میں سیدہ کے۔۔۔

بے جان خدائوں سے کہا بنتِ اسد نے
کعبے میں تو اب حیدرِ کرار رہیں گے
سائے میں سیدہ کے۔۔۔

زینب کا کھُلے سر بھرے دربار میں جانا
سجاد اسی درد سے بیمار رہیں گے
سائے میں سیدہ کے۔۔۔

وہ مشک کا چھِدنا وہ سکینہ کا بلکنا
عباس کے سینے پہ سدا وار رہیں گے
سائے میں سیدہ کے۔۔۔

ریحان میرا نامہِ اعمال ہے نوحہ
پروانہِ جنت میرے اشعار رہیں گے
سائے میں سیدہ کے۔۔۔


saaye may sayyeda ke azaadar rahenge
jab hoga sawa neze pe khurshido qayamat
saaye may sayyeda ke azaadar rahenge

badta hi chala jayege shabbir ka matam
aaye jo gham-e sheh ke alamdar rahenge
saaye may sayyeda ke....

hum khabr may sojayenge jab be-khabari se
matam ki nishaan ruh may be-daar rahenge
saaye may sayyeda ke....

har cheez ko duniya may fana hona hai ek din
qayam ghame shabbir ke aasaar rahenge
saaye may sayyeda ke....

jannat may agar majlise shabbir na hogi
hum ehle aza khuld se bezaar rahenge
saaye may sayyeda ke....

ek baar zara naam-e ali leke to dekho
mushkil may madadgaar wo har baar rahenge
saaye may sayyeda ke....

be-jaan khudaon se kaha binte asad ne
kaabe may to ab hydar-e karraar rahenge
saaye may sayyeda ke....

zainab ka khule sar bhare darbar may jaana
sajjad isi dard se bemaar rahenge
saaye may sayyeda ke....

wo mashk ka chidna wo sakina ka bilakna
abbas ke sine pe sadaa war rahenge
saaye may sayyeda ke....

rehaan mera naamaye aamaal hai nowha
parwanae jannat mere ashaar rahenge
saaye may sayyeda ke....
Noha - Saaye May Sayyeda Ke
Shayar: Rehaan Azmi
Nohaqan: Nadeem Sarwar
Download Mp3
Listen Online