قتیل تیغ و سناں لا الہ الا اللہ
تیرے بغیر کہاں لا الہ الا اللہ

حسین دہر میں اسلام کی علامت ہے
حسین وقت کی سب سے بڑی ضرورت ہے
حسین اسم تیرا ورد ہے عبادت ہے
تیرے لہو میں نہاں لا الہ الا اللہ
قتیل تیغ و سناں لا الہ الا اللہ

حسین تجھ سے بقا دین کی نبوت کی
حسین تو نے آبرو رکھی شریعت کی
حسین تو نے کمر توڑ دی سخاوت کی
تیرے سبب ہیں عیاں لا الہ الا اللہ
قتیل تیغ و سناں لا الہ الا اللہ

کسی ضعیف کی نظروں میں یوں نہیں دیکھا
قیدیوں کو رگڑتا ہے نوجوان بیٹا
الٹ کے آستین کہہ کے یاعلی مولا
تو کھینچتا ہے سناں لا الہ الا اللہ
قتیل تیغ و سناں لا الہ الا اللہ

نرالی شان سے مرنے کو ہر جوان گیا
خدا کے دین پہ مٹنے کو ہر جوان گیا
ملا جو اذن تو لڑنے کو ہر جوان گیا
مگر وہ شیر جواں لا الہ الا اللہ
قتیل تیغ و سناں لا الہ الا اللہ

بپا ہے شور و فغاں سارے آسمانوں پر
عجیب یاس ہے اہل حرم کی چہروں پر
پدر کے حکم پہ معصوم خشک ہونٹوں پر
جو پھیرتی ہے زباں لا الہ الا اللہ
قتیل تیغ و سناں لا الہ الا اللہ

دمشق کی وہ سجاوٹ کہ جیسے ہر گھر عید
علی کی بیٹیاں دربار شام اور وہ یزید
وہ چبھے خشک وہ سرور کا سر وہ ظلم شدید
لرز رہا ہے جہاں لا الہ الا اللہ
قتیل تیغ و سناں لا الہ الا اللہ

جہاں بھی مجلس سرور ہو شور ماتم ہو
میرے تو قبر میں شہید بس اک یہ غم ہو
یہ سانس آئے کہ رک جائے آنکھ پرنم ہو
فدا ہو تجھ پہ جواں لا الہ الا اللہ
قتیل تیغ و سناں لا الہ الا اللہ


qateel-e-taygh-o-sina la ilaha illal la
tere baghair kahan la ilaha illal la

hussain dayr may islam ki alamat hai
hussain waqt ki sab se badi zaroorat hai
hussain ism tera wird hai ibadat hai
tera lahoo may nihan la ilaha illal la
qateel-e-taygh....

hussain tujhse baqa deen ki nabuwat ki
hussain tune rakhi aabroo shariyat ki
hussain tune kamar tod-di shakawat ki
tere sabab hai ayan la ilaha illal la
qateel-e-taygh....

kisi zaeef ki nazron may yun nahi dekha
ke aediyon ko ragadtta hai nowjawan beta
ulat ke aasteen kehke ya ali maula
tu kheenchta hai sina la ilaha illal la
qateel-e-taygh....

niraali shan se marne ko har jawan gaya
khuda ke deen pe mitne ko har jawan gaya
mila jo izn to ladne ko har jawan gaya
magar wo shere jawan la ilaha illal la
qateel-e-taygh....

bapa hai shore fughan saare aasmano par
ajeeb yaas hai ahle haram ke chehro par
pidar ke hukm pe masoom khushk honton par
jo phairta hai zuban la ilaha illal la
qateel-e-taygh....

damishq ki wo sajawat ke jaise har ghar eid
ali ki betiyan darbare sham aur wo yazeed
wo chaubey khusk wo sarwar ka sar wo zulm shadeed
laraz raha hai jahan la ilaha illal la
qateel-e-taygh....

jahan bhi majlise sarwar ho shore matam ho
maray to qabr may shahid bas ek ye gham ho
ye saans aaye ke ruk jaye aankh purnam ho
fida ho tujpe jahan la ilaha illal la
qateel-e-taygh....
Noha - Qateel e Taygh o Sina
Shayar: Shahid Jafer
Nohaqan: Ali Yazdan
Download mp3
Listen Online