قمرِ بنی ہاشم یا مولا عباس
کربلا میں تُو پیاسوں کی آس

ہے تیرا کام دین کی اساس
آج بھی فُرات ہے تیرے ہی پاس
کربلا مین تُو پیاسوں کی آس
قمرِ بنی ۔۔۔۔۔

جرا،ت و وفا ہے تیرا پیام
اہلِ درد کا ہے تجھے سلام
اے علی کے شیر تُو ہے حق شناس
قمرِ بنی ۔۔۔۔۔

مثلِ لا فتاح صف شکن ہے تُو
شِہ کے ساتھ ساتھ بے وطن ہے تُو
تیرے دم سے ہے بس حرم کی آس
قمرِ بنی ۔۔۔۔۔

بھائی ہے تیرا شاہِ مشرقین
باپ ہے تیرا فاتح حُنین
تیرے نام سے کفر ہے اُداس
قمرِ بنی ۔۔۔۔۔

تُو لبِ فرات لڑ رہا تھا جب
تیرے خوف سے دم بخود تھے سب
اُڑ رہے تھے سر بڑھ رہی تھی یاس
قمرِ بنی ۔۔۔۔۔

عزم ہے تیرا رہبر میرا
تیرا حوصلہ ہمسفر میرا
ہو قبول یہ ہدی،ہ صفا
قمرِ بنی ۔۔۔۔۔

فوجِ شام سب تجھ سے زیر ہے
تُو ہی زبر ہے تُو دلیر ہے
شامیوں میں ہے تُجھ سے ہی حراس
قمرِ بنی ۔۔۔۔۔

نہر پر ہوئے شانے جب قلم
جس گھڑی گِرا دشت میں علم
آلِ مصطفیٰ ہو گئی اداس
قمرِ بنی ۔۔۔۔۔

عسکری کے لا ل اے میرے امام
کیجیئے ظہور لیجیئے انتقام
ناصر و ریاض کی ہے التماس
قمرِ بنی ۔۔۔۔۔


qamr-e-bani hashim ya maula abbas
karbala may tu pyaso ki aas

hai tera aaam deen ki asaas
aaj bhi furaaat hai tere hi paas
karbala may tu pyaso ki aas
qamr-e-bani....

jurrato wafa hai tera payam
ahle dard ka hai tujhe salam
ay ali ke she tu hai haq shina
qamr-e-bani....

misle la-fata saf-shikan hai tu
sheh ke saath saath bewatan hai tu
tere dam se hai bas haram ki aas
qamr-e-bani....

bhai hai tera shahe mashraqain
baap hai tera faatahe hunain
tere naam se kufr hai udas
qamr-e-bani....

tu labe furaat lad raha tha jab
tera khauf se dam bakhud se sab
ud rahe thay sar bad rahi thi yaas
qamr-e-bani....

azm hai tera raahbar mera
tera hausla humsafar mera
ho qubool ye hadiya-e-sifa
qamr-e-bani....

fauje sham sab tujhse zer hai
tu hi zabr hai tu dilayr hai
shamiyo may hai tujhse hi hiraas
qamr-e-bani....

nehr par hue shane jab qalam
jis ghadi gira dasht may alam
aale mustufa hogayi udaas
qamr-e-bani....

askari ke laal ay mere imam
kijiye zahoor lije inteqam
nasir-o-riyaz ki hai iltemas
qamr-e-bani....
Noha - Qamre Bani Hashim
Shayar: Riyaz Meerti
Nohaqan: Nasir Agha
Download Mp3
Listen Online