قبرِ شہ پر یہ کہتی تھی خواہر
بھیااُٹھو اُٹھو اُٹھو وطن جا رہی ہوں

اپنے ہاتھوں سے چادر اُڑھائو
خود اماری میں مجھ کو بیٹھائو
بن تمہارے نہ جائے گی خواہر
اُٹھو اُٹھو وطن جا رہی ہوں
قبرِ شہ پر ۔۔۔

جو یہ پوچھین گے اہلِ مدینہ
کیوں نہ ہمراہ آئی سکینہ
کیا کہوں میں بتا دو برادر
اُٹھو اُٹھو وطن جا رہی ہوں
قبرِ شہ پر ۔۔۔

ساتھ میرے چلے تھے وطن سے
کیوں جدا ہو رہے ہو بہن سے
تم کو ہمراہ جائوں گی لے کر
اُٹھو اُٹھو وطن جا رہی ہوں
قبرِ شہ پر ۔۔۔

کس کو جھُولا جھُلائے گی بانو
گود خالی نہ جائے گی بانو
میرے غنچہ دہن میرے اصغر
اُٹھو اُٹھو وطن جا رہی ہوں
قبرِ شہ پر ۔۔۔

حال عابد کا اُٹھ کے تو دیکھو
بھیا سینے سے اس کو لگا لو
ملنے آیا ہے تم سے یہ مُضطر
اُٹھو اُٹھو وطن جا رہی ہوں
قبرِ شہ پر ۔۔۔

کربلا والے تڑپے نہ محشر
ختم کر دو یہ نوحہ یہیں پر
رو دیا ہے قلم بھی یہ لکھ کر
اُٹھو اُٹھو وطن جا رہی ہوں
قبرِ شہ پر ۔۔۔


qabre sheh par ye kehti thi khwahar
bhaiya utho utho utho watan ja rahi hoo

apne haathon se chadar udhao
khud amari may mujhko bithao
bin tumhare na jayegi khaahar
utho utho watan ja rahi hoo
qabre sheh par....

jo ye poochenge ahle madina
kyun na humraah aayi sakina
kya kahoo mai batado biradar
utho utho watan ja rahi hoo
qabre sheh par....

saath mere chale thay watan se
kyun juda ho rahe ho behan se
tumko humraah jaungi lekar
utho utho watan ja rahi hoo
qabre sheh par....

kisko jhoola jhulayegi bano
godh khaali na jayegi bano
mere ghuncha dahan mere asghar
utho utho watan ja rahi hoo
qabre sheh par....

haal abid ka uth ke to dekho
bhaiya seene se isko lagalo
milne aaya hai tumse ye muztar
utho utho watan ja rahi hoo
qabre sheh par....

karbala wale tadpe na mehshar
qatm kardo ye noha yahin par
rodiya hai qalam bhi ye likh kar
utho utho watan ja rahi hoo
qabre sheh par....
Noha - Qabre Sheh Par
Shayar: Mehshar Lakhnavi
Nohaqan: Tableeq e Imamia (Nazim Hussain)
Download Mp3
Listen Online