زندہ رہے گا پیغامِ حُسین ابنِ علی
اسلام سدا زندہ پائندہ رہے گا
پیغامِ حُسین ابنِ علی

مٹ جائے گا ہر نقش ہر اک شے کو فنا ہے
لیکن شاہِ مرداں کی قسم حق کو بقا ہے
شبیر نے خنجر کے تلے وعدہ لیا ہے
اسلام سدا زندہ پائندہ رہے گا
پیغامِ حُسین ۔۔۔۔۔

احمد کے نواسے کا حقیقت میں کرم ہے
اسلام سلامت ہے حفاظت میں حرم ہے
شبیر تو انسان کی عظمت کا بھرم ہے
ہے عظمت کا یہ تارا یونہی رخشندہ رہے گا
پیغامِ حُسین ۔۔۔۔۔

یہ سوچ لے ہے وقت ابھی خوب سمجھ لے
شبیر کو عظمت کی کسوٹی پہ پرکھ لے
یہ بات حقیقت ہے اسے ذہن میں رکھ لے
حق اُبھرے گا باطل سدا شرمندہ رہے گا
پیغامِ حُسین ۔۔۔۔۔
ہر سال محرم میں مناتے ہیں یہی غم
کرتے ہیں یونہی سیدِابرار کا ماتم
ہم اہلِ اعزا طور بدلتے نہیں ہر دم
جو کل تھا وہی آج ہے آئندہ رہے گا
پیغامِ حُسین ۔۔۔۔۔

شبیر کا ماتم نہ رُکے گا نہ رُکا ہے
واللہ یہ معصومہِ عالم کی دُعا ہے
اس غم کے مقابل میں جو غم لایا گیا ہے
باطل ہے وہ مٹ جائے گاحق زندہ رہے گا
پیغامِ حُسین ۔۔۔۔۔

پھر کھیل رہے ہیں وہ وہی کھیل پرانا
ابلاغ کی قوت سے حقیقت کا دبانا
یہ سچ ہے کہ جھوٹوں کا جہنم ہے ٹھکانا
شرمندہ سدا ظُلم کا کارندہ رہے گا
پیغامِ حُسین ۔۔۔۔۔

سچ سچ ہے زمانے میں فسانہ ہے فسانہ
آسان نہیں حق کی یہ آواز دبانا
عالم میں ہے ممتاز محمد کا گھرانا
یہ تا با عبد حق کا نمائندہ رہے گا
پیغامِ حُسین ۔۔۔۔۔

آئینے کی صورت سے ہر ایک چہرہ عیاں ہے
زر کس کا ہے سوداگر ایماں کہاں ہے
کچھ دُشمن یہ آل کی حد اہلِ جہاں ہے
کب تک یہ دلوں میں تے سرِ ہندہ رہے گا
پیغامِ حُسین ۔۔۔۔۔

شبیر نے واللہ بڑا کام کیا ہے
اسلام پہ جو تیر چلا دل پہ لیا ہے
خونِ رگِ گردن سے اسے غُسل دیا ہے
اسلام کا چہرہ یونہی تابندہ رہے گا
پیغامِ حُسین ۔۔۔۔۔


zinda rehega paighame hussain bine ali
islam sada zinda painda rahega
paighame hussain ibne ali

mit jayega har naksh har ek sheh ko fana hai
lekin shahe mardan ki qasam haq ko baqa hai
shabbir ne khanjar ke talay waada liya hai
islam sada zinda painda rahega
paighame hussain....

ahmed ke nawase ka haqeeqat may karam hai
islam salamat hai hifazat may haram hai
shabbir to insan ki azmat ka bharam hai
hai azmat ka ye taara yuhin raqshinda rahega
paighame hussain....

ye soch le hai waqt abhi khoob samajh le
shabbir ko azmat ki kasauti pe parakh le
ye baat haqeeqat hai isay zehn may rakhle
haq ubhrega baatil sada sharminda rahega
paighame hussain....

har saal muharram may manate hai yehi gham
karte hai yuhin sayyede abrar ka matam
hum ahle aza taur badalte nahi har dam
jo kal tha wohi aaj hai aainda rahega
paighame hussain....

shabbir ka matam na rukega na ruka hai
wallaha ye masooma e aalam ki dua hai
is gham ke mukaabil may jo gham laaya gaya hai
baatil hai wo mit jayega haq zinda rahega
paighame hussain....

phir khel rahe hai wo wohi khel purana
iblaagh ki quwwat se haqeeqat ka dabana
ye sach hai ke jhooton ka jahannum hai thikana
sharminda sada zulm ka karinda rahega
paighame hussain....

sach sach hai zamane may fasana hai fasana
aasan nahi haq ki ye awaaz dabana
aalam mai hai mumtaz muhammad ka gharana
ye kaaba abad haq ka numaainda rahega
paighame hussain....

aaeene ke surat se har ek chehra ayan hai
zar kiska hai saudagar emaan kahan hai
kuch dushman ye aal ki had ahle jahan hai
kab tak ye dilon may tay sare hinda rahega
paighame hussain....

shabbir ne wallah bada kaam kiya hai
islam pe jo teer chala dil pe liya hai
khoone ragay gardan se isay ghusl diya hai
islam ka chehra yuhin tabinda rahega
paighame hussain....
Noha - Paighame Hussain Ibne

Nohaqan: Sachey Bhai
Download Mp3
Listen Online