نوحہ تھا سکینہ کے لب پر زنداں میں اندھیرا گہرا ہے
مر جائوں گی تنہا ڈر ڈر کر زنداں میں اندھیرا گہرا ہے

میں کب سے صدائیں دیتی ہوں کیوں سُنتے نہیں فریاد میری
میں روتی نہیں اے بابا مگر زنداں میں اندھیرا ہے
نوحہ تھا سکینہ ۔۔۔۔۔

معصوم سکینہ سہمی ہوئی اک کونے میں سمٹی بیٹھی ہوں
کچھ آتا نہیں بچی کو نظر زنداں میں اندھیرا گہرا ہے
نوحہ تھا سکینہ ۔۔۔۔۔

جینے کی مجھے کچھ آس نہیں اب کوئی بھی میرے پاس نہیں
روتی ہوں اکیلے ڈر ڈر کر زنداں میں اندھیرا گہرا ہے
نوحہ تھا سکینہ ۔۔۔۔۔

اے بابا گر میں مر جائوں تو شام سے پہلے تُربت پر
اک شمع جلا دینا آ کر زنداں میں اندھیرا گہرا ہے
نوحہ تھا سکینہ ۔۔۔۔۔

خود شام کے رہنے والے بھی یہ سوچ کے آہیں بھرتے ہیں
کم سِن ہے وہاں شہ کی دُخترزنداں میں اندھیرا گہرا ہے
نوحہ تھا سکینہ ۔۔۔۔۔

جو نور تھی شہ کی آنکھوں کا وہ بچی اندھیری قید میں ہے
ہر لمحہ قیامت ہے اُس پر زنداں میں اندھیرا گہرا ہے
نوحہ تھا سکینہ ۔۔۔۔۔

اب اس کے اُجا لوں سے روشن ہے سارا زمانہ اے گوہر
کہتی تھی جو بچی رو رو کر زنداں میں اندھیرا گہرا ہے
نوحہ تھا سکینہ ۔۔۔۔۔



noha tha sakina ke lab par zindan may andhera gehra hai
marjaungi tanha darr darr kar zindan may andhera gehra hai

mai kab se sadayein deti hoo kyun sunte nahi faryaad meri
mai roti nahi ay baba magar zindan may andhera gehra hai
noha tha sakina....

masoom sakina sehmi hui ek kone may simti baithi hai
kuch aata nahi bachi ko nazar zindan may andhera gehra hai
noha tha sakina....

jeene ki mujhe kuch aas nahi ab koi bhi mere paas nahi
roti hoo akele darr darr kar zindan may andhera gehra hai
noha tha sakina....

ay baba gar mai mar jaun to shaam se pehle turbat par
ek shamma jala dena aakar zindan may andhera gehra hai
noha tha sakina....

khud shaam ke rehne waale bhi ye soch ke aahein bharte hai
kamsin hai waha sheh ki dukhtar zindan may andhera gehra hai
noha tha sakina....

jo noor thi sheh ki aankhon ka wo bachi andheri qaid may hai
har lamha qayamat hai uspar zindan may andhera gehra hai
noha tha sakina....

ab iske ujaalon se raushan hai saara zamana ay gohar
kehti jo bachi ro ro kar zindan may andhera gehra hai
noha tha sakina....
Noha - Noha Tha Sakina
Shayar: Gohar
Nohaqan: Tableeq e Imamia (Nazim Hussain)
Download Mp3
Listen Online