مصطفی گریہ کناں مرتضیٰ گریہ کناں
فاطمہ نوحہ کناں میرا مظلوم حسین

خون سینے سے ابلتا ہے کوئی تو روکے
ساتھ ہی دم بھی اکھڑتا ہے کوئی تو روکے
جان سے جاتا ہے پیمبر سا جواں
فاطمہ نوحہ کناں میرا مظلوم حسین
مصطفی گریہ کناں

کسی نوشاہ کی لاش آئی ہے مقتل سے ابھی
اور دلہن کوئی خاموش ہے سکتے میں کھڑی
سارا خیمہ ہے قیامت کا سماں
فاطمہ نوحہ کناں میرا مظلوم حسین
مصطفی گریہ کناں

گزر کا وار لگا سر پہ تو سنبھلا نہ گیا
اپنے رہوار سے بے دست زمین پر آیا
مشک سینے سے مگر ہے چسپاں
فاطمہ نوحہ کناں میرا مظلوم حسین
مصطفی گریہ کناں

لاش بے شیر لئے خیمے کی سمت آتے ہیں
جانے کیا سوچ کے پھر شاہ پلٹ جاتے ہیں
منتظر ہے در خیمہ پر ماں
فاطمہ نوحہ کناں میرا مظلوم حسین
مصطفی گریہ کناں

خون برستا ہے فضائوں سے لرزتی ہے زمیں
شاہ دیں سجدہ آخر میں جھکاتے ہیں جبین
یہی سر ہو گا سر نوک سناں
فاطمہ نوحہ کناں میرا مظلوم حسین
مصطفی گریہ کناں

زخم سجاد کا اس طرح سے رستہ جائے
طوق گردن میں لہو طوق پر گرتا جائے
اور پائوں میں وہ زنجیر گراں
فاطمہ نوحہ کناں میرا مظلوم حسین
مصطفی گریہ کناں

شمر برچھی سے اتارے گا جو زینب کی ردا
رن میں شاہد تڑپ اٹھے گا جری کا لاشہ
اب حرم کا نہیں کوئی نگراں
فاطمہ نوحہ کناں میرا مظلوم حسین
مصطفی گریہ


mustafa girya kuna murtaza girya kuna
fatema noha kuna mere mazloom hussain

khoon seene se ubalta hai koi to roke
saath hi dam bhi ukhadta hai koi to roke
jaan se jaata hai payambar sa jawan
fatema noha kuna mere mazloom hussain
mustafa girya kuna....

kisi naushah ki laash aayi hai maqtal se abhi
aur dulhan koi khamosh hai sakte may khadi
sare khaima hai qayamat ka sama
fatema noha kuna mere mazloom hussain
mustafa girya kuna....

gurz ka waar laga sar pa to sambhla na gaya
apne rehwaar se bedast zameen par aaya
mashk seene se magar hai chispan
fatema noha kuna mere mazloom hussain
mustafa girya kuna....

laashe baysheer liye khaime ke simt aate hai
jaane kya soch ke phir shah palat jaate hai
muntazir hai dare khaima par maa
fatema noha kuna mere mazloom hussain
mustafa girya kuna....

khoon barasta hai fizaon se larazti hai zameen
shah-e-deen sajdaye aakhir may jhukate hai jabeen
yehi sar hoga sare nokay sina
fatema noha kuna mere mazloom hussain
mustafa girya kuna....

zakhme sajjad ka is tarha se rista jaye
tauq gardan may lahoo tauq pa girta jaye
aur paon may wo zanjeere garan
fatema noha kuna mere mazloom hussain
mustafa girya kuna....

shimr barchi se utarega jo zainab ki rida
ran may shahid tadap uthega jari ka laasha
ab haram ka nahi koi nigaran
fatema noha kuna mere mazloom hussain
mustafa girya kuna....
Noha - Mustufa Girya Kuna
Shayar: Shahid Jafer
Nohaqan: Murtaza/Riaz
Download mp3
Listen Online