مولا حق امام یا حسن یا حسین

وہ عابدِ بیمارتھا، چلنے سے جو لاچار تھا
اور شام کا بازار تھا،اور مصطفیٰ کی بیٹیاں
مولا حق امام ۔۔۔۔۔

شبیر کی وہ لاڈلی ،سینے پہ وہ شاہ کے پلی
جسکی عبا بن میں جلی، منہ پہ تماچوں کے نشاں
مولا حق امام ۔۔۔۔۔

پیاسے گلے خنجر چلے، چادر چھِنی خیمے جلے
عباس کے پرچم تلے رو کر کہے یہ بیٹیاں
مولا حق امام ۔۔۔۔۔

رو کر کہے قاسم کی ماں، مارا گیا قاسم جواں
اے لال میں ڈھونڈوں کہاں مہندی تیری تیرا جہاں
مولا حق امام ۔۔۔۔۔

وہ اصغرِ بے شیر تھا ، اور حُرملا کا تیر تھا
پیاسا گلا کیونکر کٹا،لرزی زمیں اور آسماں
مولا حق امام ۔۔۔۔۔

شامِ غریباں چھا گئی ، عابد کو غیرت آگئی
پہرے پہ زینب آ گئی، عباس اور اکبر کہاں
مولا حق امام ۔۔۔۔۔


maula haq imam ya hassan ya hussain

wo abide bemaar tha, chalne se jo lachaar tha
aur shaam ka bazaar tha, aur mustufa ki betiyaan
maula haq imam....

shabbir ki wo laadli, seene pe wo shah ke pali
jiski amaa ban may jali, moo pe tamacho ke nishaan
maula haq imam....

pyase galay khanjar chalay, chadar chini qaime jale
abbas ke parcham talay rokar kahe ye betiyaan
maula haq imam....

rokar kahe qasim ki maa, maara gaya aatam jawaan
ay laal mai dhoondu kahan mai bhi teri tera jahaan
maula haq imam....

wo asghare baysheer tha, aur hurmala ka teer tha
pyaasa gala kyonkar kata, larzi zameen aur aasmaan
maula haq imam....

sham-e-ghareeban chagayi, abid ko ghairat aa gayi
pehre pe zainab aagayi, abbas aur akbar kahan
maula haq imam....
Noha - Maula Haq Imam

Nohaqan: Nasir Asghar
Download Mp3
Listen Online