ماتم کی صدا سے سویا ہوا احساس جگایا جاتا ہے
جو آل نبی پہ گذری ہے مجلس میں بتایا جاتا ہے
ماتم کی صدا سے سویا

اسلام کی شیدائی سیکھیں یوں دین بچایا جاتا ہے
سر تن سے کٹایا جاتا ہے گھر بار لٹایا جاتا ہے
جو آل نبی پہ گذری

شبیر یہ دکھلایا ہے غربت میں سارے عالم کو
پیری میں جواں کے لاشے کو کس طرح اٹھایا جاتا ہے
جو آل نبی پہ گذری

سر تن سے کٹا کر بھی لوگوں ہوتی ہے عبادت خالق کی
یا نوک سناں کے منبر سے قرآن سنایا جاتا ہے
جو آل نبی پہ گذری

قاسم کی شہادت ہوتی ہے اک شب کی سہاگن رانڈ ہوئی
افسوس کے اک اک چوڑی کو بیوا کی بڑھایا جاتا ہے
جو آل نبی پہ گذری

لاشہ نہ اٹھا پایا نہ کفن وہ جس کی لحد بھی بن نہ سکی
ہر سمت اسی کا دنیا میں تابوت اٹھایا جاتا ہے
جو آل نبی پہ گذری

یہ نقش غم سرور ہے ذکی مٹنے کا نہیں یہ دنیا سے
اتنا ہی ابھرتا رہتا ہے جتنا کے دبایا جاتا ہے
جو آل نبی پہ گذری


matam ki sada se soya hua, ehsaas jagaya jaata hai
jo aale nabi par guzri hai, majlis may bataya jaata hai
matam ki sada se....

islam ke shedayi seekhay, yun deen bachaya jaata hai
sar tan se kataya jaata hai, ghar baar lutaaya jaat hai
jo aale nabi....

shabbir ne ye dikhlaya hai, ghurbat may bhi saare aalam ko
peeri may jawan ke laashe ko, kis tarh uthaaya jaat hai
jo aale nabi....

sar tan se kata kar bhi logon, hoti hai ibadat khaaliq ki
ya noke sina ke mimbar se, quran sunaya jaat hai
jo aale nabi....

qasim ki shahadat hote hi, ek shab ki suhagan rand hui
afsos ke ek ek choori ko, bewa ki badhaya jaat hai
jo aale nabi....

laasha na utha paaya na kafan, wo jiski lahad bhi ban na saki
har samt usi ka dunya may, taboot uthaaya jaat hai
jo aale nabi....

ye naqshe ghame sarwar hai zaki, mitne ka nahi ye dunya se
utna hi ubharta rehta hai, jitna ke dabaya jaat hai
jo aale nabi....
Noha - Matam Ki Sada Se
Shayar: Zaki
Nohaqan: Ali Zia Rizvi
Download Mp3
Listen Online