میں خاک کربلا ہوں رتبہ میرا جدا ہے
بنت علی نے مجھکو چادر بنا لیا ہے

کرتے ہیں رشک مجھ پر کوثر کے بھی کنارے
زینب کے سر میں میں نے دو سال ہیں گزارے
میرا ہر ایک ذرّہ ہر ظلم کا گواہ ہے
میں خاک کربلا ہوں

اکبر جوان قاسم غازی سے چند تارے
زین الابا نے میری آگوش میں اتارے
یعنی لہو نبی کا مجھ میں ملا ہوا ہے
میں خاک کربلا ہوں

روتی ہوں یاد کر کے وہ بیکسی کا منظر
مولا چھپا رہے تھے مجھ میں وہ لاشہ اصغر
ہاں اس دن سے آج تک نہ مجھکو سکوں ملا ہے
میں خاک کربلا ہوں

شہدا کربلا کے زخموں کو میں نے چوما
زہرہ کی بیٹیوں کے قدموں کو میں نے چوما
اس واسطے ہی میری تاثیر میں شفا ہے
میں خاک کربلا ہوں

اکبر کی لاش پر جب شببر جارہے تھے
اٹھتے تھے بیٹھتے تھے اور لڑکھڑا رہے تھے
منظر وہ اب بھی میری آنکھوں میں پھر رہا ہے
میں خاک کربلا ہوں...

اے زایرین مولا چلنا یہاں سنبھل کر
قرآن فاطمہ کا بکھرا ہوا ہے مجھ پر
نہ جانے کس جگہ پر کس کا لہو گرا ہے
میں خاک کربلا ہوں

توقیر تو بھی کرلے آل عبا کا ماتم
جا شام میں گئی تھی اس بے ردا کا ماتم
ممنون ماتمی کی مقدومہ فاطمہ ہے
میں خاک کربلا ہوں


mai khake karbala hoo rutba mera juda hai
binte ali ne mujhko chadar bana liya hai

karte hai rashk mujhpar kausar ke bhi kinare
zainab ke sar may maine do saal hai guzaare
mera har ek zarra har zulm ka gawah hai
mai khake...

akbar jawan qasim ghazi se chand taare
zainulliba ne meri aagosh may utaare
yani lahoo nabi ka mujhme mila hua hai
mai khake...

roti hoo yaad karke wo bekasi ka manzar
maula chupa rahe thay mujhme wo laashe asghar
haa us din se aaj tak na mujhko sukoon mila hai
mai khake...

shohda e karbala ke zakhmo ko miane chooma
zehra ki betiyon ke khadmo ko maine chooma
is waaste hi meri taaseer may shifa hai
mai khake...

akbar ki laash par jab shabbir jaa rahe thay
uth-thay thay baiththay thay aur ladkhada rahe thay
manzar wo ab bhi meri aankhon may phir raha hai
mai khake...

ay zayareene maula chalna yahan sambhal kar
quran fatema ka bikhra hua hai mujhpar
na jaane kis jagah par kiska lahoo gira hai
mai khake...

tauqeer tu bhi karle aale aba ka matam
ja sham may gayi thi us berida ka matam
mamnoon matami ki maqdooma fatema hai
mai khake...
Noha - Mai Khake Karbala
Shayar: Tauqeer
Nohaqan: Mir Hassan Mir
Download Mp3
Listen Online