لے کر جنازہ دوش پہ شیرِ خدا چلے
دارِ فنا کو چھوڑ کے جب مصطفیٰ چلے

دُنیا اُجڑ گئی کے مدینہ اُجڑ گیا
سادات ساتھ ساتھ یہ کر کے بُقا چلے
لے کر جنازہ ۔۔۔۔۔

نبیوں کا ختم ہوتا ہے دُنیا سے سلسلہ
احمد چلے جہاں سے کُل انبیائ چلے
لے کر جنازہ ۔۔۔۔۔

کیا ہو گیا علی کو جو خاموش چل دیئے
رسی گلے میں ڈال کے جب اشقیائ چلے
لے کر جنازہ ۔۔۔۔۔

سب جانتے ہیں کیا ہوا شبر کی لاش پر
کیا کیا مصیبتیں ہوئیں اور تیر کیا چلے
لے کر جنازہ ۔۔۔۔۔

کر ب و بلا کی آج ہی بنیاد پڑ گئی
کس کو بیٹھائے تخت پر اور کس طرح چلے
لے کر جنازہ ۔۔۔۔۔

طے ہو رہا ہے کس طرح مارے حسین کو
ہے کون ایسا لے کے انہیں کربلا چلے
لے کر جنازہ ۔۔۔۔۔

برباد کس طرح کرے زہرا کے باغ کو
طوفان کس طرح کا اور کیسی ہوا چلے
لے کر جنازہ ۔۔۔۔۔

نوحہ یہ نور کا ہے سکندر کی ہے زبان
پڑھتے ہوئے ہر ایک یہ کر کے عزا چلے
لے کر جنازہ ۔۔۔۔۔


lekar janaza dosh pe shere khuda chale
daare fana ko chor ke jab mustufa chale

dunya ujad gayi ke madina ujad gaya
sadaat saath saath ye karke buka chale
lekar janaza....

nabiyon ka khatm hota hai dunya se silsila
ahmed chale jahan se kul ambiya chale
lekar janaza....

kya hogaya ali ko jo khamosh chal diye
rassi galay may daal ke jab ashkiyan chale
lekar janaza....

sab jaante hai kya hua shabbar ki laash par
kya kya musibatein hui aur teer kya chale
lekar janaza....

karbobala ki aaj hi bunyad padh gayi
kisko bithaye takht par aur kis tarha chale
lekar janaza....

tay ho raha hai kis tarha maare hussain ko
hai kaun aisa leke inhe karbala chale
lekar janaza....

barbaad kis tarha kare zehra ke baagh ko
toofan kis tarha ka aur kaisi hawa chale
lekar janaza....

noha ye noor ka hai sikandar ki hai zaban
padte hue har ek ye karke aza chale
lekar janaza....
Noha - Lekar Janaza Dosh
Shayar: Noor
Nohaqan: Mirza Sikander Ali
Download Mp3
Listen Online