کیا قیامت لبِ علقمہ ہے
مشک چھِدی پانی بہا ہو گئے بازو قلم
خون سے عباس کا سُرخ ہوا جب علم

شور اُٹھا نہر پر، قتلِ علمدار شُدّ
شاد ہوئے اہلِ شر، قتلِ علمدار شُدّ
دیکھا سُوئے نہر تو شبیر نے رو کر کہا
خون میں ڈوبا علم عباس کا

اب میرا لشکر کہاں ، قتلِ علمدار شُدّ
میں ہوا تنہا یہاں ، قتلِ علمدار شُدّ
کیوں نہ کمر ہو کماں، قتلِ علمدار شُدّ
کیوں نہ لہو آ نکھوں سے برسائوں بتا کربلا
خون میں ڈوبا ۔۔۔۔۔

رونے لگی علقمہ ، قتلِ علمدار شُدّ
موجوں نے ماتم کیا، قتلِ علمدار شُدّ
دشت سے آئی صدا ، قتلِ علمدار شُدّ
دیکھا سُوئے نہر تو زینب کو نظر آ گیا
خون میں ڈوبا ۔۔۔۔۔

خیموں میں ہے شور و شین، قتلِ علمدار شُدّ
لُٹ گیا زہرا کا چین ، قتلِ علمدار شُدّ
رو کے یہ بولے حسین، قتلِ علمدار شُدّ
میری سکینہ کے لیے ہو گا پیام ِ قضا
خون میں ڈوبا ۔۔۔۔۔

کرتی ہے زینب بُقا، قتلِ علمدار شُدّ
کوئی نہیں آسرا ، قتلِ علمدار شُدّ
بھائی اکیلا ہوا، قتلِ علمدار شُدّ
سر سے ردا جائے گی زینب کو یقیں ہو گیا
خون میں ڈوبا ۔۔۔۔۔

فضّہ نے پائی خبر، قتلِ علمدار شُدّ
ہاتھ رکھا قلب پر ، قتلِ علمدار شُدّ
پھینکی ردا خاک پر ، قتلِ علمدار شُدّ
اہلِ حرم ساتھ ہوئے پڑھنے لگی مرثیہ
خون میں ڈوبا ۔۔۔۔۔

بچوں سے شِہہ نے کہا،قتلِ علمدار شُدّ
ٹُوٹ گیا آسرا،قتلِ علمدار شُدّ
پانی نہیں آئے گا، قتلِ علمدار شُدّ
بھیگی ہوئی آنکھوں سے دیکھو تو سُوئے علقمہ
خون میں ڈوبا ۔۔۔۔۔

نوحہ ہے کلثوم کا، قتلِ علمدار شُدّ
کیسے جائوں گی بھلا، قتلِ علمدار شُدّ
مجھ کو نہ آئی قضا،قتلِ علمدار شُدّ
آس میری ٹُوٹ گئی دیکھا جو میرے خدا
خون میں ڈوبا ۔۔۔۔۔

روتے ہیں مشکل کُشائ ، قتلِ علمدار شُدّ
نانا نے نوحہ کیا، قتلِ علمدار شُدّ
کہتی ہے ماں سیدہ، قتلِ علمدار شُدّ
دیکھ نیا زخم میرے لال تجھے دے گیا
خون میں ڈوبا ۔۔۔۔۔

کرتا ہے مظہر بُقا،قتلِ علمدار شُدّ
خاک اُڑائو ذرا،قتلِ علمدار شُدّ
نوحہ ہے عرفان کا ،قتلِ علمدار شُدّ
پیٹتی ہے سینہ و سر دیکھ کے اہلِ اعزا
خون میں ڈوبا ۔۔۔۔۔


kya qayamat lab-e-alqama hai
mashk chidi pani baha ho gaye baazu qalam
khoon se abbas ka surkh huwa jab alam

shor utha nehr par, qatl-e-alamdar shud
shaad huve ehl-e-shar, qatl-e-alamdar shud
dekha suye nehr to shabbir ne rokar kaha
khoon may dooba alam abbas ka

ab mera lashkar kahan, qatl-e-alamdar shud
mai hua tanha yahan, qatl-e-alamdar shud
kyun na kamar ho kaman, qatl-e-alamdar shud
kyun na lahoo aankhon se barsa-un bata karbala
khoon may dooba....

rone lagi alqama, qatl-e-alamdar shud
maujon ne matam kiya, qatl-e-alamdar shud
dasht se aayi sada, qatl-e-alamdar shud
dekha suye nehr to zainab ko nazar aagaya
khoon may dooba....

qaimo may hai shor-o-shain, qatl-e-alamdar shud
lut gaya zehra ka chain, qatl-e-alamdar shud
roke ye bole hussain, qatl-e-alamdar shud
meri sakina ke liye hoga payam-e-qaza
khoon may dooba....

karti hai zainab buka, qatl-e-alamdar shud
koi nahi aasra, qatl-e-alamdar shud
bhai akela huwa, qatl-e-alamdar shud
sar se rida jayegi zainab ko yakeen hogaya
khoon may dooba....

fizza ne paayi khabar, qatl-e-alamdar shud
haath rakha qalb par, qatl-e-alamdar shud
phaynki rida khaak par, qatl-e-alamdar shud
ehl-e-haram saath huwe padhne lagi marsiya
khoon may dooba....

bachon se sheh ne kaha, qatl-e-alamdar shud
toot gaya aasra, qatl-e-alamdar shud
pani nahi aayega, qatl-e-alamdar shud
bhigi huvi aankhon se dekho to suye-alqama
khoon may dooba....

noha hai kulsoom ka, qatl-e-alamdar shud
kaise jiyungi bhala, qatl-e-alamdar shud
mujko na aayi qaza, qatl-e-alamdar shud
aas meri toot gayi dekha jo mere khuda
khoon may dooba....

rote hai mushkil kusha, qatl-e-alamdar shud
nana ne nawha kiya, qatl-e-alamdar shud
kehti hai maa sayyeda, qatl-e-alamdar shud
dekh naya zakhm mere laal tujhe degaya
khoon may dooba....

karta hai mazhar buka, qatl-e-alamdar shud
khaak udao zara, qatl-e-alamdar shud
nawha hai irfaan ka, qatl-e-alamdar shud
peet-te hai sina-o-sar dekh ke ehl-e-aza
khoon may dooba....
Noha - Khoon May Dooba
Shayar: Mazhar Abidi
Nohaqan: Irfan Haider
Download Mp3
Listen Online