کرتے تھے سرور بکا ہائے کمر جھک گئی
مر گیا بھائی میرا ہائے کمر جھک گئی

مر گئے ہم جیتے جی چھٹ گئے ہم سے اخی
ہو گیا بازو جدا ہائے کمر جھک گئی
مر گیا بھائی میرا

قوت بازو تھا وہ قلب کی طاقت تھا وہ
ہو گئے ہم بے نوا ہائے کمر جھک گئی
مر گیا بھائی میرا

تھام لو بازو پسر لے چلو سوئے فرات
مر گئے تیرے چچا ہائے کمر جھک گئی
مر گیا بھائی میرا

لے چلو اکبر وہاں بھائی ہے میرا جہاں
جلد چلو مہہ لقا ہائے کمر جھک گئی
مر گیا بھائی میرا

در پہ کھڑی بے قرار کرتی ہے وہ انتظار
اس سے کہوں گا میں کیا ہائے کمر جھک گئی
مر گیا بھائی میرا

لے کے چچا کا علم نوحہ یہ پڑھتے ہوئے
جائو سوئے خیمہ گاہ ہائے کمر جھک گئی
مر گیا بھائی میرا

پیاس سے سب ہیں نڈھال پانی کا ہو گا سوال
کہنا وہ سب بہہ گیا ہائے کمر جھک گئی
مر گیا بھائی میرا

ایسا انیس اب کہاں پائے گا سبط نبی
جیسا کہ عباس تھا ہائے کمر جھک گئی
مر گیا بھائی میرا


karte thay sarwar buka haye kamar jhuk gayi
mar gaya bhai mera haye kamar jhuk gayi

margaye hum jeete ji chut gaye humse aqi
hogaye baazu juda haye kamar jhuk gayi
mar gaya bhai....

khuwate baazu tha wo khalb ki taaqat tha wo
hogaye hum benawa haye kamar jhuk gayi
mar gaya bhai....

thaam lo bazu pisar le chalo suye faraad
mar gaye tere chacha haye kamar jhuk gayi
mar gaya bhai....

le chalo akbar wahan bhai hai mera jahan
jald chalo mehleqa haye kamar jhuk gayi
mar gaya bhai....

darr pe khadi beqarar karti hai wo intezar
ussay kahunga mai kya haye kamar jhuk gayi
mar gaya bhai....

le ke chacha ka alam noha ye padte huye
jao suye qaimagah haye kamar jhuk gayi
mar gaya bhai....

pyas se sab hai nidhaal pani ka hoga sawaal
kehna wo sab beh gaya haye kamar jhuk gayi
mar gaya bhai....

aisa anees ab kahan paaega sibte nabi
jaisa ke abbas tha haye kamar jhuk gayi
mar gaya bhai....
Noha - Karte Thay Sarwar Buka
Shayar: Anees Pehersari
Nohaqan: Ali Zia Rizvi
Download Mp3
Listen Online