کربلا آ گئے اسلام بچانے والے

بِچھ گیا فرشِ اعزا چھڑ گئی شبیر کی بات
عرش والے بھی ہیں اب فرش پہ آنے والے
کربلا آ گئے ۔۔۔۔۔

کس قدر چین سے سوتے ہیں سرِ کرب و بلا
دینِ اسلام کی تقدیر جگانے والے
کربلا آ گئے ۔۔۔۔۔

میرے آقا تیری غربت پہ ضعیفی پہ سلام
اے جواں بیٹے کی میت کو اُٹھانے والے
کربلا آ گئے ۔۔۔۔۔

بے خطر ہو کہ ستائیں گے سکینہ کو عدُو
ی کو بچانے والےاب کہاں ظُلم سے بچ
کربلا آ گئے ۔۔۔۔۔

حشر کے روز جہنم میں جلیں گے آخر
بن میں سادات کے خیموں کو جلانے والے
کربلا آ گئے ۔۔۔۔۔

سب تیرے شعر زمانے کو سُناتے ہیں گوہر
پڑھنے والے ہوں نئے چاہے پُرانے والے
کربلا آ گئے ۔۔۔۔۔


karbala aagaye islam bachane waale

bichgaya farshe aza chid gayi shabbir ki baat
arsh waale bhi hai ab farsh pe aane waale
karbala aagaye....

kis khadar chain se sotay hai sare karbobala
deene islam ki taqdeer jagane waale
karbala aagaye....

mere aaqa teri ghurbat pe zaeefi pe salaam
ay jawan bete ki mayyat ko uthaane waale
karbala aagaye....

be khatar hoke satayenge sakina ko udoo
ab kahan zulm se bachi ko bachane waale
karbala aagaye....

hashr ke roz jahanum may jalenge aakhir
ban may saadaat ke qaimo ko jalaane waale
karbala aagaye....

sab tere sher zamane ko sunaate hai goher
padne waale ho naye chaahe puraane waale
karbala aagaye....
Noha - Karbala Aagaye Islam
Shayar: Goher
Nohaqan: Tableeq e Imamia (Nazim Hussain)
Download Mp3
Listen Online