کہا عباس نے اِک آن میں نقشہ پلٹ جائے

ہو عزنِ شِہ تو نہرِ علقمہ لاشوں سی پٹ جائے
کہا عباس نے ۔۔۔۔۔

علمدارِ حُسینی ہوں اِجازت شِہ کی گر پائوں
کروں وہ جنگ جنگِ خیبری ذہنوں سے ہٹ جائے
کہا عباس نے ۔۔۔۔۔

لعیں یہ کہہ کہ بھاگے نہر سے وہ شیر آتا ہے
نِگاہِ قہر سے جو دیکھ لیں دریا سمٹ جائے
کہا عباس نے ۔۔۔۔۔

حُسینی ہوں میرے قدموں کو جُنبش ہو نہیں سکتی
الاتا ہے جو دُنیا کی ہوا کا رُخ پلٹ جائے
کہا عباس نے ۔۔۔۔۔

یہ حسرت ہے ثنائِ مُرتضٰی میں غیر کے ہاتھوں
زباں میری بھی مثلِ میثمِ تمار کٹ جائے
کہا عباس نے ۔۔۔۔۔

نبی سے کون باتیں کرتا تھا ہو جائے یہ ظاہر
یہ بندہ درمیاں سے گر شبِ معراج ہٹ جائے
کہا عباس نے ۔۔۔۔۔

دُعا خالق سے اُٹھتے بیٹھتے کرتا ہوں یہ اصغر
نبی کی آل ہی کا ذکر ہو اور عمر کٹ جائے
کہا عباس نے ۔۔۔۔۔


kaha abbas ne ek aan may naksha palat jaye

ho izn e sheh to nehre alqama laashon se pat jaye
kaha abbas ne....

alamdare hussaini hoo ijazat sheh ki gar paaun
karoo wo jang jange khyberi zehno se hat jaye
kaha abbas ne....

layeen ye kehke bhaage nehr se wo sher aata hai
nigahe kaher se jo dekhlein darya simat jaye
kaha abbas ne....

hussaini hoo mere qadmo ko jumbish ho nahi sakti
ala ta hai to dunya ki hawa ka rukh palat jaye
kaha abbas ne....

ye hasrat hai sanaye murtaza may ghair ke haathon
zaban meri bhi misle meesame tammar kat jaye
kaha abbas ne....

nabi se kaun baatein karta tha hojaye ye zaahir
ye banda darmiyan se gar shabe mmeraj hat jaye
kaha abbas ne....

dua khaaliq se uth-tay baith-tay karta hoo ye asghar
nabi ki aal hi ka zikr ho aur umr kat jaye
kaha abbas ne....
Noha - Kaha Abbas Ne

Nohaqan: Sachey Bhai
Shayar: Asghar
Download Mp3
Listen Online