ہاتھوں میں لیے ننھے سے جھولے کو یہ مادر
بکھرائے اپنے بالوں کو کہتی رہی اصغر
تُو کیا گیا کے چھایا ہے آ نکھوں میں اندھیرا
کر ب و بلا میں ہو گیا برباد میرا گھر

جھولا ہے جلا اے لال تیرا
ہے خاک بسر رن میں بانو
رونے بھی نہیں دیتے اعدا
ہے خاک بسر رن میں بانو

اسباب لُٹا خیمے بھی جلے
چادر بھی چھِنی دُرّے بھی لگے
ڈوبا ہوا رن میں ہے کنبہ
ہے خاک بسر ۔۔۔۔۔
جھولا ہے جلا ۔۔۔۔۔

اک ہوک سی دل میں اُٹھتی ہے
اور درد جگر میں ہوتا ہے
ہنستا ہوا گلشن لُوٹا ہے
ہے خاک بسر ۔۔۔۔۔
جھولا ہے جلا ۔۔۔۔۔

کانوں سے لہو جو بہتا ہے
شکوہ بھی کرے تو کس سے کرے
بابا ہے اور نہ اُس کا چچا
ہے خاک بسر ۔۔۔۔۔
جھولا ہے جلا ۔۔۔۔۔

وہ سوکھی لبوں کی یادیں بھی
یاد آتی ہے اُس کی پیاری ہنسی
یاد آتی ہے اُس کی ہر اک ادا
ہے خاک بسر ۔۔۔۔۔
جھولا ہے جلا ۔۔۔۔۔

یہ کیسی قیامت آئی ہے
مرجھائی گئی ننھی سی کلی
دھڑکن میں ہے ماتم کی صدا
ہے خاک بسر ۔۔۔۔۔
جھولا ہے جلا ۔۔۔۔۔

وہاں غش میں پڑے ہیں زین العبا
یاں زینبِ کبریٰ کی ہے فغاں
کیا ماجرا ہے یا رب تُو بتا
ہے خاک بسر ۔۔۔۔۔
جھولا ہے جلا ۔۔۔۔۔

اب کون سہارا دے اُس کو
اب کون دلاسا دے اُس کو
برباد ہوئی اُس کی دنیا
ہے خاک بسر ۔۔۔۔۔
جھولا ہے جلا ۔۔۔۔۔

اُس دن سے لے کر موت تلک
سائے میں نہ بیٹھی احمد وہ
دل کے ہیں حسن کے غم یہ بیاں
ہے خاک بسر ۔۔۔۔۔
جھولا ہے جلا ۔۔۔۔۔


haathon may liye nanhe se jhoolay ko ye maadar
bikhrae apne balon ko kehti rahi asghar
tu kya gaya ke chaya hai aankhon may andhera
karbobala may hogaya barbaad mera ghar

jhoola hai jala ay laal tera
hai khaak basar ran may bano
ronay bhi nahi dete aada
hai khaak basar ran may bano

asbab luta khaimay bhi jalay
chadar bhi chini durray bhi lagay
dooba hua ran may hai kunba
hai khaak basar....
jhoola hai jala....

ek hookh si dil may uth-thi hai
aur dard jigar may hota hai
hasta hua gulshan loota gaya
hai khaak basar....
jhoola hai jala....


kano se lahoo jo behta hai
shikwa bhi kare to kisse kare
baba hai aur na uska chacha
hai khaak basar....
jhoola hai jala....

wo sookhi labon ki yaadein bhi
yaad aati hai uski pyari haseen
yaad aati hai uski har ek ada
hai khaak basar....
jhoola hai jala....

ye kaisi qayamat aayi hai
murjhayi gayi nanhi si kali
dhadkan may hai matam ki sada
hai khaak basar....
jhoola hai jala....

wan ghash may paday hai zainul-liba
yan zainabe kubra ki hai fughan
kya maajra hai ya rab tu bata
hai khaak basar....
jhoola hai jala....

ab kaun sahara de usko
ab kaun dilaasa de usko
barbaad hui uski dunya
hai khaak basar....
jhoola hai jala....

us din se lekar maut talak
saaye may na baithi ahmed wo
dil ke hai hassan ke gham ye bayaan
hai khaak basar....
jhoola hai jala....
Noha - Jhoola Hai Jala
Shayar: Zulfiqar Ahmed
Nohaqan: Jawad-ul-Hassan
Download Mp3
Listen Online