جری دلیرِ علمدار با وفا عباس
حسینیت کا سہارا پیعمبری کا بھرم
جو چھا گیا درِ صحرا مثالِ ابرِ کرم
ہوئے ہیں ہاتھ قلم پھر بھی جھُک سکا نہ علم
جہانِ صبر کو جینا سیکھا گیا عباس
جری دلیرِ علمدار ۔۔۔

جو زورِ بازوئے شبیر کربلا میں رہا
وہ پہرادارِ حرم تاجدارِ اہلِ وفا
فرات جس کی شہادت پر آب آب ہوا
خاموش رِہ کے جہاں کو رُلا گیا عباس
جری دلیرِ علمدار ۔۔۔

ابھی تو ساحلِ دریا پہ ہے وہی پہرا
ابھی تو اصغرِ بے شیر بھی نہیں سویا
ابھی تو جاگ رہے ہیں خیام میں بچے
نہ جانے کے لیے مقتل میں سو گیا عباس
جری دلیر علمدار۔۔۔

رسن پہن کے یہ کہتی تھی رو کے بنتِ علی
تمہارے بعدکوئی دل میں آس بھی نہ رہی
جلے خیام بھی جاگیرِ فاطمہ بھی لُٹی
غضب کے چھِن گئی سر سے میری ردا عباس
جری دلیرِ علمدار ۔۔۔

کروں شجاعتِ عباس کس طرح سے بیاں
نہ میرے پاس وہ دل ہے نہ میرے پاس زباں
یہی بہت ہے کہ مقتل میں ہو کے نوحہ بجاں
ہر اک شہید نے گِرتے ہوئے کہا عباس
جری دلیرِ علمدار ۔۔۔

لکھا ہے یہ لُفِ تاریخ پر بقعد سے جلی
وفا کی رسم تو عباسِ نوجواں سے چلی
زمانے بھر کا سہارا حسین ابنِ علی
حسین ابنِ علی کا ہے آسرا عباس
جری دلیرِ علمدار ۔۔۔

کریں حشر میںناصر حسین کا ماتم
جری کے ساتھ شاہِ مشرقین کا ماتم
علم کے ساتھ سکینہ کے بین کا ماتم
لبِ فرات پہ پیاسا جو سو گیا عباس
جری دلیرِ علمدار ۔۔۔


jari diler-e-alamdar bawafa abbas
hussainiat ka sahara payambari ka bharam
jo chaa gaya dare sehra misaale abre karam
huwe hai haath qalam phir bhi jhuk saka na alam
jahaan-e-sabr ko jeena sikha gaya abbas
jari diler-e-alamdar....

jo zore baazue shabbir karbala may raha
wo pehradaare haram tajdaare ehlay wafa
faraath jiski shahadat par aab aab huwa
khamosh rehke jahaan ko rula gaya abbas
jari diler-e-alamdar....

abhi to saahile darya pe hai wohi pehre
abhi to asghare baysheer bhi nahi sooyay
abhi to jaag rahe hai qayaam may bache
na jaane ki liye maqtal may sogaya abbas
jari diler-e-alamdar....

rasan pehan ke ye kehti thi roke binte ali
tumhare baad koi dil may aas bhi na rahi
jale qayaam bhi jaageray fathima bhi luti
ghazab ke chin gayi sar se meri rida abbas
jari diler-e-alamdar....

karoon shujaate abbas kis tarha se bayaan
na mere paas wo dil hai na mere paas zubaan
yahi bahut hai ke maqtal may hoke nowha-bajan
har ek shaheed ne girtay huwe kaha abbas
jari diler-e-alamdar....

likha hai ye lufe tareeq par baqad se jali
wafa ki rasm to abbase nowjawan se chali
zamane bhar ka sahara hussain ibne ali
hussain ibne ali ka hai aasra abbas
jari diler-e-alamdar....

karenge hashr may nasir hussain ka matam
jari ke saath shahe mashraqayn ka matam
alam ke saath sakina ke bain ka matam
labe faraath pe pyasa jo sogaya abbas
jari diler-e-alamdar....
Noha - Jari Diler e Alamdar

Nohaqan: Nasir Zaidi
Download Mp3
Listen Online