حسینیوں کے لیے جوش و ولولہ عباس
یزیدیوں کے لیے قہرِ کبریائ عباس

دعائیں آج بھی مقبول ہیںتیرے در کی
بلند پایا ہے وہ تُو نے مرتبہ عباس
حسینیوں کے لیے ۔۔۔۔۔

چلا تُو مشکِ سکینہ کو بھر کے سُوئے خیام
غضب ہے تیرِ ستم کا ہدف بنا عباس
حسینیوں کے لیے ۔۔۔۔۔

رہے گی زمینِ تعمیلِ حکمِ شاہِ اُمم
لبِ فرات وہ پیاسی تیری وغا عباس
حسینیوں کے لیے ۔۔۔۔۔

ہر ایک گام پہ کہتے تھے سیدِ سجاد
مدد کو آئیے بحرِ خدا چچا عباس
حسینیوں کے لیے ۔۔۔۔۔

دیارِ شام میں زینب پُکار اُٹھی تھی
ردائے پاک کے وارث ہیں بے ردا عباس
حسینیوں کے لیے ۔۔۔۔۔

بھٹک نہ پائے وہ اظہار جو شہہ کا زائر ہے
یہ کربلا میں دیکھاتے ہیں معجزے عباس
حسینیوں کے لیے ۔۔۔۔۔


hussainiyo ke liye josh o walwala abbas
yazeediyo ke liye qehre kibriya abbas

duayein aaj bhi maqbool hai tere dar ki
buland paaya hai wo tune martaba abbas
hussainiyo ke liye....

chala to mashke saknia ko bhar ke suye qayam
ghazab hai teere sitam ka hadaf bana abbas
hussainiyo ke liye....

rahegi zaamine tameele hukme shahe umam
labe furaat wo pyasi teri wegha abbas
hussainiyo ke liye....

har ek gaam pe kehte thay sayyede sajjad
madad ko aaiye behre khuda chacha abbas
hussainiyo ke liye....

dayaar e sham may zainab pukaar uthi thi
ridaye paak ke waaris hai be-rida abbas
hussainiyo ke liye....

bhatak na paaye wo azhar jo sheh ka zaair hai
ye karbala may dikhate hai maujeza abbas
hussainiyo ke liye....
Noha - Hussainiyo Ke Liye
Shayar: Azhar
Nohaqan: Mirza Sikander Ali
Download Mp3
Listen Online