حُسین سب تیری قُربانیوں کا صدقہ ہے
کے آج تک دلِ انسانیت دھڑکتا ہے
حُسین سب تیری ۔۔۔

غمِ حُسین میں آنسُو پھر اُس کے بعد اِرم
خرید لو کے یہ سودا بہت ہی سستا ہے
حُسین سب تیری ۔۔۔

مُباہلے کی یہ صورت بتا رہی ہے ہمیں
کہ پنجتن کے مُقابل جو آئے جھوٹا ہے
حُسین سب تیری ۔۔۔

حُسینیت کو لہو چاہیئے بقا کے لیئے
یزیدیت نے پھر ایک بار سر اُبھارا ہے
حُسین سب تیری ۔۔۔

اُسے حُسین سے نسبت نہ دو خُدا کے لیئے
جو مصلِحت سے غمِ شِہ میں کام لیتا ہے
حُسین سب تیری ۔۔۔

ہے کیا جوازِ ستم اے زمینِ کرب و بلا
کے تین روز سے مہمان تیرا پیاسا ہے
حُسین سب تیرے ۔۔۔

الٰہی خیر کسی کی نظر نہ لگ جائے
ضعیف باپ کا کڑیل جوان بیٹا ہے
حُسین سب تیری ۔۔۔

جسے حُسین نے اٹھارہ سال پالا تھا
زمینِ گرم پہ وہ ایڑیاں رگڑتا ہے
حُسین سب تیری ۔۔۔

خُدارا اس کو تماچے نہ مار اے ظالم
یہ بچی غم کی ستائی ہوئی سکینہ ہے
حُسین سب تیری ۔۔۔

نہ لُوٹ چادرِ زینب نہ چھین سر سے ردا
یہ بنتِ زہرا ہے ظالم یہ بنتِ زہرا ہے
حُسین سب تیری ۔۔۔


hussain sab teri qurbaniyo ka sadqa hai
ke aaj tak dile insaniyat dhadakta hai
hussain sab teri....

ghame hussain may aansu phir uske baad iram
khareed lo ke ye sauda bahot hi sasta hai
hussain sab teri....

mubahile ki ye soorat bata rahi hai hamay
ke panjetan ke muqabil jo aaye jhoota hai
hussain sab teri....

hussainiyat ko lahoo chahiye baqa ke liye
yazeediyat ne phir ek baar sar ubhaara hai
hussain sab teri....

usay hussain se nisbat na do khuda ke liye
jo maslehat se ghame sheh may kaam leta hai
hussain sab teri....

hai kya jawaze sitam ay zameene karbobala
ke teen roz se mehmaan tera pyasa hai
hussain sab teri....

elaahi qair kisi ki nazar na lagjaye
zaeef baap ka kadiyal beta hai
hussain sab teri....

jise hussain ne athara saal paala tha
zameene garm pe wo aydiya ragad-ta hai
hussain sab teri....

khudara isko tamache na maar ay zaalim
ye bachi gham ki satayi hui sakina hai
hussain sab teri....

na loot chadare zainab na cheen sar se rida
ye binte zehra hai zaalim ye binte zehra hai
hussain sab teri....
Noha - Hussain Sab Teri

Nohaqan: Sachey Bhai
Download Mp3
Listen Online