حسینیواُٹھو اُٹھو حسین کی صدا سُنو
دُعا سیدہ ہو تم صدائے سیدہ سُنو

نبوتوں کے عزم کا حسین ورثہ دار ہے
چمنِ حق کی آج بھی حسین سے بہار ہے
جہان میں حسین سے رسول کا وقار ہے
حسین کی خوشی میں ہے رضائے کبریائ سُنو
حسینیواُٹھو اُٹھو۔۔۔۔۔

حسین بے مثال تھا حسین بے مثال ہے
حسین لازوال تھا حسین لازوال ہے
غمِ حسین روک دے کسی کی کیا مجال ہے
رہے گا غم حسین کا خدا کا فیصلہ سُنو
حسینیواُٹھو اُٹھو۔۔۔۔۔

یہ شاہِ مشرقین ہے علی کا نورعین ہے
یہ سیدہ کا لال ہے نبی کے دل کا چین ہے
سوار دوشِ مصطفیٰ جہان میں حسین ہے
اسی کو پرائے جگر رسول نے کہا سُنو
حسینیواُٹھو اُٹھو۔۔۔۔۔

حسین کے شرف پہ خود کتابِ حق گواہ ہے
حسین ہے شہیدِ حق حسین دیں پناہ ہے
ہیں جس میں سب کے سب علی حسین کی سپاہ ہے
بتا رہے ہیں یہ شرف تمام اولیائ سُنو
حسینیواُٹھو اُٹھو۔۔۔۔۔

پڑا جو وقت دین پر تو اپنا سر کٹا دیا
راہِ خدا میں اس نے اپنا سارا گھر لُٹا دیا
نواسہِ رسول ہوں جہاں کو یہ بتا دیا
بغور استغاثہ ِ شہیدِ کربلا سُنو
حسینیواُٹھو اُٹھو۔۔۔۔۔

منائو غم حسین کا سروں کو اپنے پیٹ کر
مصیبتِ حسین پر لہو لہو رہے نظر
بھائو اشک خون کے محب ہو سیدہ کے گر
ہے اشکِ غم ہی مرہمِ شہیدِ کربلا سُنو
حسینیواُٹھو اُٹھو۔۔۔۔۔

شہید رن میں ہو گئے جوان اکبرِ جری
حسین کے گلے پہ کربلا میں چل گئی چھُری
کیا نبی کی آل کو یزید نے اسیر بھی
یزیدیت کے ظلم کا یہی ہے واقعہ سُنو
حسینیواُٹھو اُٹھو۔۔۔۔۔

شجاع اور ریاض کی حسین سے ہے التجا
غمِ فراق دُور ہو بُلائے جلد کربلا
درِ حسین سے ملے غمِ حیات کی دوا
یہی ہے بس جہان میں ہمارا مدعا سُنو
حسینیواُٹھو اُٹھو۔۔۔۔۔


hussainyo utho utho hussain ki sada suno
dua sayyeda ho tum sadaye sayyeda suno

nabuwato ke azm ka hussain virsadaar hai
chamane haq ke aaj bhi hussain se bahaar hai
jahan may hussain se rasool ka waqar hai
hussain ki khushi may hai raza-e-kibriya suno
hussainyo utho utho....

hussain bemisal tha hussain bemisal hai
hussain lazawaal tha hussain lazawaal hai
ghame hussain rokh de kisi ki kya majaal hai
rahega gham hussain ka khuda ka faisla suno
hussainyo utho utho....

ye shahe mashraqain hai ali ka noore ain hai
ye sayyeda ka laal hai nabi ke dil ka chain hai
sawar doshe mustufa jahan may hussain hai
isi ko paraye jigar rasool ne kaha suno
hussainyo utho utho....

hussain ke sharaf pe khud kitabe haq gawah hai
hussain hai shaheede haq hussain deen panah hai
hai jisme sab ke sab ali hussain ki sipaah hai
bata rahe hai ye sharaf tamam auliya suno
hussainyo utho utho....

pada jo waqt deen par to apna sar kata diya
rahe khuda may isne apna saara ghar luta diya
nawasaye rasool hoo jahan ko ye bata diya
baghaur istighasaye shaheede karbala suno
hussainyo utho utho....

manao gham hussain ka saro ko apne peet kar
musibate hussain par lahoo lahoo rahe nazar
bahao ashk khoon ke muhib ho sayyeda ke gar
hai ashqe gham hi marhame shaheede karbala suno
hussainyo utho utho....

shaheed ran may hogaye jawan akbare jari
hussain ke galay pe karbala may chal gayi churi
kiya nabi ki aal ko yazeed ne aseer bhi
yazeediyat ke zulm ka yahi hai waqia suno
hussainyo utho utho....

shuja aur riyaz ki hussain se hai ilteja
ghame firaaq door ho bulaye jald karbala
dare hussain se milay ghame hayaat ki dawa
yehi hai bas jahan may hamara mudda-a suno
hussainyo utho utho....
Noha - Hussain Ki Sada
Shayar: Riyaz Meerti
Nohaqan: Shuja Haider
Download Mp3
Listen Online