ہم کو ہے اپنی جان سے پیارا غمِ حُسین
قائم رہے جہان میں خُدایا غمِ حُسین

روزِ علس ِ پوچھا گیا کیا پسند ہے
بے اختیار ہم نے پُکارا غمِ حُسین
قائم رہے ۔۔۔۔۔

جب چاہا سیدہ کے قدم آئیں گھر میرے
فرشِ اعزا بچھایا منایا غمِ حُسین
قائم رہے ۔۔۔۔۔

کم ظرف کو جہان میں ملا جب بھی اقتدار
پہلے بنا ستم کا نشانہ غمِ حُسین
قائم رہے ۔۔۔۔۔

ہر کُفر و ظلم و جور و تشدد کے سامنے
ہے آج بھی محاذوں پہ تنہا غمِ حُسین
قائم رہے ۔۔۔۔۔


humko hai apni jaan se pyara ghame hussain
qayam rahe jahan may khudaya ghame hussain

roze alas se pooocha gaya kya pasand hai
be-yakhtiyar humne pukara ghame hussain
qayam rahe....

jab chaaha sayyeda ke khadam aaye ghar mere
farshe aza bichaya manaya ghame hussain
qayam rahe....

kamzarf ko jahan may mila jab bhi iqteda
pehle bana sitam ka nishana ghame hussain
qayam rahe....

har kufro zulmo joro tashaddud ke saamne
hai aaj bhi mahazo pe tanha ghame hussain
qayam rahe....
Noha - Humko Hai Apni

Nohaqan: Sachey Bhai
Download Mp3
Listen Online