ہم زندہ ہیں ماتمِ شبیر کے لیے

دورِ اُمیہ میں یہ کسکا خون تھا جو کہ بہتا تھا
اہلِ وفا کو اہلِ اعزا کو دیواروں میں چُنا گیا
پھر کبھی ایک صدائے پیہم آتی تھی دیواروں سے
ہم زندہ ہیں۔۔۔۔۔

ہر جابر سے ہر ظالم سے ہم تھے جو ٹکراتے تھے
اس ماتم کی خاطر ہم نے گھر کے گھر قُربان کیے
غالب آخر حق آیا باطل نے گُھٹنے ٹیک دیئے
ہم زندہ ہیں ۔۔۔۔۔

طوفانوں کی زد پہ ہمیشہ ہم نے دیئے جلائے ہیں
اتنے ضدی سر کش حاسد ہم کو مٹانے آئے ہیں
دیوانوں کے خواب ادھورے اب تک پورے ہو نہ سکے
ہم زندہ ہیں۔۔۔۔۔

اہلِ بیت کے در کو چھوڑیں اپنا یہ کردار نہیں
ہر انسان کو رہبر کہہ دیں اپنے یہ اطوار نہیں
کل بھی جو اپنا مولا تھا آج بھی اپنا مولا ہے
ہم زندہ ہیں ۔۔۔۔۔

کچھ دیوانے ہیں ایسے بھی کرب و بلا کو بھول گئے
اللہ اللہ یاد رکھا اور آلِ عبا کو بھول گئے
راہِ وفا سے ہٹنے والو تم کو کون یہ سمجھائے
ہم زندہ ہیں ۔۔۔۔۔

سر دے کر گھر بار لُٹا کر ہم نے یہ غم پایا ہے
اس کی خاطر جانے کتنا اپنا خون بہایا ہے
جو خون سرِ تاریخ بہا اُس خون کی خاطر بول اُٹھے
ہم زندہ ہیں ۔۔۔۔۔

جذ بہِ میثم لے کر ہم نے نفرت کا رُخ موڑ دیا
طلم و ستم کی زنجیروں کو اپنے عمل سے توڑ دیا
نام و نشاں تک مٹ جاتے ہیں ہم کو مٹانے والوں کے
ہم زندہ ہیں ۔۔۔۔۔

نوحہ گروں اور سینہ زنوں کو زینب دیتی ہے یہ دُعا
گھر نہ اُجڑے ہائے کسی کا جیسے میرا گھر اُجڑا
بس ایک ارمان ہے زینب کا قائم یہ غم صدا رہے
ہم زندہ ہیں ۔۔۔۔۔


hum zinda hai matame shabbir ke liye

daure ummaya may ye kiska khoon tha jo ke behta tha
ahle wafa ko ahle aza ko deewaro may chuna gaya
phir bhi ek sadaye payham aati thi deewaro se
hum zinda hai....

har jaabir se har zaalim se hum thay jo takrate thay
is matam ki khaatir humne ghar ke ghar qurbaan kiye
ghalib aakhir haq aaya baatil ne ghutney tayk diye
hum zinda hai....

toofano ki zad pe hamesha humne diye jalaye hai
itne ziddi sarkash haasid humko mitane aaye hai
deewano khaab adhoore ab tak poore ho na sake
hum zinda hai....

ahlebayt ke dar ko choray apna ye kirdaar nahi
har insan ko rehbar kehde ye apne atwaar nahi
kal bhi jo apna maula tha aaj bhi apna maula hai
hum zinda hai....

kuch deewane aise bhi karbobala ko bhool gaye
allah allah yaad rakha aur ahle abaa ko bhool gaye
raahe wafa se hatne walo tumko kaun ye samjhaye
hum zinda hai....

sar dekar ghar-baar lutakar humne ye gham paaya hai
iski khaatir jaane kitna apna khoon bahaya hai
jo khoon sare tareeq nbaha us khoon ke katre bol uthay
hum zinda hai....

jazbaye meesam lekar humne nafrat ka rukh mod diya
zulm-o-sitam ki zanjeero ko apne amal se tod diya
namo nishan tak mit jaate hai humko mitane walo ke
hum zinda hai....

nauhagaro aur seena zano ko zainab deti hai ye dua
ghar na ujde haaye kisi ka jaisa mera ghar ujda
bas ek armaan hai zainab ka qayam ye gham sada rahe
hum zinda hai....
Noha - Hum Zinda Hai

Nohaqan: Sachey Bhai
Download Mp3
Listen Online