ہو گئے بازو قلم مشک بچائی نہ گئی
پیاس سقہ سے سکینہ کی بجھائی نہ گئی

جانے کیا کہہ گیا بھائی سے علمدارِ جری
لاش عباس کی سرور سے اُٹھائی نہ گئی
ہو گئے بازو قلم ۔۔۔۔۔

لاش اندھیرے میں سکینہ کی تھی محتاجِ کفن
شمع تک شام کے زنداں میں جلائی نہ گئی
ہو گئے بازو قلم ۔۔۔۔۔

کربلا سے ہے بہت دور سکینہ کا مزار
آج تک باپ سے بیٹی کی جدائی نہ گئی
ہو گئے بازو قلم ۔۔۔۔۔

لاشِ اکبر پہ یہ کہا لیلیٰ نے رو رو کر
ہائے قسمت تیری شادی بھی رچائی نہ گئی
ہو گئے بازو قلم ۔۔۔۔۔

ختم ہے سیدِ سجاد پہ یہ طرزِ جفا
پھر امامت کبھی کانٹوں پہ چلائی نہ گئی
ہو گئے بازو قلم ۔۔۔۔۔

بازوئے شاہ میں اک تیر تھاہاتھ اُٹھ نہ سکے
لاش اصغر کی کلیجے سے لگائی نہ گئی
ہو گئے بازو قلم ۔۔۔۔۔

رُک گیا تیرا قلم ہاتھوں تک آتے ہی وقار
مجھ سے عباس کی تصویر بنائی نہ گئی
ہو گئے بازو قلم ۔۔۔۔۔


hogaye baazu qalam mashk bachayi na gayi
pyas saqqa se sakina ki bujhayi na gayi

jaane kya keh gaya bhai se alamdari jari
laash abbas ki sarwar se uthaayi na gayi
hogaye baazu qalam....

laash andhere may sakina ki thi mohtaje kafan
shamma tak shaam ke zindan may jalaayi na gayi
hogaye baazu qalam....

karbala se hai bahot door sakina ka mazaar
aaj tak baap se beti ki judaai na gayi
hogaye baazu qalam....

laashe akbar pe ye laila ne kaha ro ro kar
haye qismat teri shaadi bhi rachayi na gayi
hogaye baazu qalam....

qatm hai sayyed e sajjad pe ye tarz e jafa
phir imamat kabhi kaaton pe chalayi na gayi
hogaye baazu qalam....

baazu e shah may ek teer tha haath uth na sake
laash asghar ki kaleje se lagayi na gayi
hogaye baazu qalam....

ruk gaya tera qalam haathon tak aate hi waqar
mujhse abbas ki tasveer banayi na gayi
hogaye baazu qalam....
Noha - Hogaye Baazu Qalam
Shayar: Waqar
Nohaqan: Sajid Hussain Jafri
Download Mp3
Listen Online