رات بھر دور سے آواز بکا آتی ہے
ہائے بے شیر اصغر
کوئی لوری ہے جو نوحے میں بدل جاتی ہے
ہائے بے شیر اصغر

سنبھلے ہوئے دل تھامے ہوئے ماتمیوں
ہاں اسے سنتے رہو
اک آواز ہے جو قلب کو تھراتی ہے
ہائے بے شیر اصغر

کبھی ہاتھوں پہ شہہ دیں کے تو چہرے پہ کبھی
یہ نامی ہے کیسی
یہ کسی خون کی سرخی سے نظر آتی ہے
ہائے بے شیر اصغر

خالی گہوار کو آخر یہ بلاتا ہے کون
اور سہلاتا ہے کون
بے کسی جس کی طرف دیکھ کے شرماتی ہے
ہائے بے شیر اصغر

عمر بھر سائے میں بیٹھی نہ تیرے بعد کبھی
اور نہ بیٹھے گی کبھی
دھوپ اس ماں کے قریب آکے ٹھٹھک جاتی ہے
ہائے بے شیر اصغر

کوئی دکھیائی بہن دور بہت دور کہیں
ہے مسلسل غمگین
یاد تیری اسے ہر وقت رلواتی ہے
ہائے بے شیر اصغر

رات کا پچھلا پہر ہو گیا ہے شاہد پھر بھی
ہے وہی بے چینی
اک فریاد کی لے عرش سے ٹکراتی ہے
ہائے بے شیر اصغر


raat bhar door se awaze buka aati hai
haye baysheer asghar
koi lori hai jo nowhay may badal jati hai
haye baysheer asghar

sambhale hue dil thame hue matamiyo
han isay sunte raho
ek awaaz hai jo kalb ko thar-rati hai
haye baysheer....

kabhi haathon pe shahe deen ke to chehre pe kabhi
ye nami hai kaisi
ye kisi khoon ki surhki si nazar aati hai
haye baysheer....

khaali gehware ko aakhir ye hilaata hai kaun
aur behlaata hai kaun
bekasi jis ki taraf dekh ke sharmati hai
haye baysheer....

umr bhar saaye may baithi na tere baad kabhi
aur na baithegi kabhi
dhoop us maa ke kareeb aake thitak jaati hai
haye baysheer....

koi dukhiyai behan door bahot door kahin
hai musalsal ghamgeen
yaad teri usay har waqt hi rulwaati hai
haye baysheer....

raat ka pichla pehar hoagaya shahid phir bhi
hai wohi bechaini
ek faryaad ki ley arsh se takrati hai
haye baysheer....
Noha - Haye Baysheer Asghar
Shayar: Shahid Jafer
Nohaqan: Murtaza/Riaz
Download Mp3
Listen Online