گونجتی رہتی ہے زینب کی صدا زنداں میں
آ گئی ہائے سکینہ کو قضا زنداں میں

رو کے زینب نے کہا لُٹ گیا سرور کا چمن
سر پہ چادر نہیں کس طرح دوں بی بی میں کفن
دُخترِ شِہ ہوئی کنبے سے جُدا زنداں میں
آ گئی ہائے ۔۔۔۔۔
گونجتی رہتی ۔۔۔۔۔

اب نہ تم فُرقتِ شبیر میں رونا بی بی
شاہ کے سینے پہ اب چین سے سونا بی بی
آں نگہباں تمہارا ہے خدا زنداں میں
آ گئی ہائے ۔۔۔۔۔
گونجتی رہتی ۔۔۔۔۔

بعد مرنے کے کھُلی آپ کے بازو سے رسن
باپ کی طرح سے پایا نہیں بی بی نے کفن
آپ پر یہ ستم و ظلم ہوا زنداں میں
آ گئی ہائے ۔۔۔۔۔
گونجتی رہتی ۔۔۔۔۔

گوشوارے بھی چھِنے آپ کا دامن بھی جلا
جب کے بی بی پہ ہوا ظلم و ستم حد سے سوا
آئے لینے اُسے خود شاہِ ھُدیٰ زنداں میں
آ گئی ہائے ۔۔۔۔۔
گونجتی رہتی ۔۔۔۔۔

یوں سکینہ نے یتیمی کی قیامت دیکھی
بعدِ شبیر اسیری بھی مصیبت دیکھی
آ نہیں سکتی تھی باہر سے ہوا زنداں میں
آ گئی ہائے ۔۔۔۔۔
گونجتی رہتی ۔۔۔۔۔

خُشک آنکھوں سے بہاتی رہی بچی پیہم
قید میں رو کے سکینہ نے کیا جب ماتم
ہو گئی مجلسِ شبیر بپا زنداں میں
آ گئی ہائے ۔۔۔۔۔
گونجتی رہتی ۔۔۔۔۔

اشک معصومہ نے آنکھوں سے بہائے جس دم
نظمِ کونین بھی ہونے لگا اُس دم برہم
ہو گئی اک قیامت سی بپا زنداں میں
آ گئی ہائے ۔۔۔۔۔
گونجتی رہتی ۔۔۔۔۔

ایسا لگتا ہے کے غربت میں نکل جائے گی جاں
قید سے آ کے چھُڑائو میرے عموں ہو کہا
تھی سکینہ کے لبوں پر یہ دُعا زنداں میں
آ گئی ہائے ۔۔۔۔۔
گونجتی رہتی ۔۔۔۔۔

آج بھی شام کے زندان سے یہ آتی ہے صدا
بی بی ہم شام سے جاتے ہیں سُوئے کرب و بلا
ہو گئی تم پھُوپھی اماںجُدا زنداں میں
آ گئی ہائے ۔۔۔۔۔
گونجتی رہتی ۔۔۔۔۔

پردئہ غیبت سے ہو کوئی وسیلہ ظاہر
جائیں بی بی کی زیارت کو ریاض و ناصر
سجدئہ عشق کریں جا کے ادا زنداں میں
آ گئی ہائے ۔۔۔۔۔
گونجتی رہتی ۔۔۔۔۔


goonjti rehti hai zainab ki sada zindan may
aagayi haye sakina ko qaza zindan may

roke zainab ne kaha lutgaya sarwar ka chaman
sar pe chadar nahi kis tarha doo bibi mai kafan
dukhtare sheh hui kunbe se juda zindan may
aagayi haye....
goonjti rehti....

ab na tum furqate shabbir may rona bibi
shah ke seene pe ab chain se dona bibi
an nigehban tumhara hai khuda zindan may
aagayi haye....
goonjti rehti....

baad marne ke khuli aap ke baazu se rasan
baap ki tarha sa paaya nahi bibi ne kafan
aap par ye sitam-o-zulm hua zindan may
aagayi haye....
goonjti rehti....

goshware bhi chinay aap ka daman bhi jala
jab ke bibi pe hua zulm-o-sitam hadh se siwa
aaye lene usay khud shahe huda zindan may
aagayi haye....
goonjti rehti....

yun sakina ne yateemi ki qayamat dekhi
baade shabbir aseeri bhi musibat dekhi
aa nahi sakti thi bahar se hawa zindan may
aagayi haye....
goonjti rehti....

khushk aankhon se bahati rahi bachi payham
qaid may roke sakina ne kiya jab matam
hogayi majlis-e-shabbir bapa zindan may
aagayi haye....
goonjti rehti....

ashk masooma ne aankhon se bahaye jis dam
razme kaunain bhi hone laga us dam barham
hogayi ek qayamat si bapa zindan may
aagayi haye....
goonjti rehti....

aisa lagta hai ke ghurbat may nikal jayegi jaan
qaid se aake churao mere ammu ho kahan
thi sakina ke labon par ye dua zindan may
aagayi haye....
goonjti rehti....

aaj bhi sham ke zindan se ye aati hai sada
bibi hum sham se jaate hai suye karbobala
hogayi tum phuphi amma se juda zindan may
aagayi haye....
goonjti rehti....

pardaye ghaib se ho koi waseela zaahir
jaye bibi ki ziyarat ko riyaz-o-nasir
sajdaye ishq kare jaake ada zindan may
aagayi haye....
goonjti rehti....
Noha - Goonjti Rehti Hai
Shayar: Riyaz Meerti
Nohaqan: Nasir Agha
Download Mp3
Listen Online