غمِ شبیر ہے آہ و فغاں ہے
یہی محشر حیاتِ جاوداں ہے

ثنائِ شہ میرے بس کی کہاں ہے
میں قطرہ ہوں وہ بحرِ بیکراں ہے
غمِ شبیر ہے ۔۔۔۔۔

قلم جو مدح سرور میں رواں ہے
یزیدی قلب پر نوکِ سناں ہے
غمِ شبیر ہے ۔۔۔۔۔

جہاں کھلتے ہیں گُل حقِ امامت
وہ خاتونِ جناں کا گُلستاں ہے
غمِ شبیر ہے ۔۔۔۔۔

حُسین ابنِ علی کشتی کے لنگر
ردائے بنتِ زہرا بازباں ہے
غمِ شبیر ہے ۔۔۔۔۔

دہن شہ کا پیعمبر کی زبان ہے
نبوت کی امامت ترجمہ ہے
غمِ شبیر ہے ۔۔۔۔۔

پسر کی لاش پر کہتی تھی لیلٰی
اُٹھو بیٹا کہ اب وقتِ اذاں ہے
غمِ شبیر ہے ۔۔۔۔۔

کیئے جا مدحتِ آلِ پیعمبر
یہی محشر حیاتِ جاوداں ہے
غمِ شبیر ہے ۔۔۔۔۔

غمِ شبیر ہے ۔۔۔۔۔
پسر کی لاش پر کہتی تھی لیلٰی
اُٹھو بیٹا کہ اب وقتِ اذاں ہے
غمِ شبیر ہے ۔۔۔۔۔
کیئے جا مدحتِ آلِ پیعمبر
یہی محشر حیاتِ جاوداں ہے
غمِ شبیر ہے ۔۔۔۔۔


ghame shabbir hai aaho fughan hai
yehi mehshar hayate jaweda hai

sanaye sheh mere bas ki kahan hai
mai khatra hoo wo behre bekaran hai
ghame shabbir hai....

qalam jo madhe sarwar may rawan hai
yazeedi khalb par noke sina hai
ghame shabbir hai....

jahan khilte hai gul haq e imamat
wo khatoone jina ka gulsitan hai
ghame shabbir hai....

hussain ibne ali kashti ke langar
ridaye binte zehra baazban hai
ghame shabbir hai....

dehen sheh ka payambar ki zaban hai
nabuwat ki imamat tarjuma hai
ghame shabbir hai....

pisar ki laash par kehti thi laila
utho beta ke ab waqte azan hai
ghame shabbir hai....

kiye ja midhate aale payambar
yehi mehshar hayate jaweda hai
ghame shabbir hai....
Noha - Ghame Shabbir Hai
Shayar: Mehshar Lakhnavi
Nohaqan: Tableeq e Imamia (Nazim Hussain)
Download Mp3
Listen Online