گر حق کی جستجو ہے تو بزمِ اعزا میں آ
بتلائوں تجھ کو مجلس و ماتم ہے کیوں بپا

حق کی ہے عرش فرش میں پھیلی ہوئی ضیائ
حق کہتے ہیں اُسے جو ہے میزانِ کبریائ
حق کہتے ہیں جسے وہ ہے ایمانِ انبیائ
حق کی صفت تو خاص میں ہے ایک مُصطفٰی
گر حق کی جستجو ۔۔۔۔۔

وہ مُصطفٰی کہ جن کا محمد ہے پاک نام
وہ جن کے قول و فعل سے حق کا ملا دوام
یعنی بغیر وحی جو کرتے نہیں کلام
قرآن بتا رہا ہے جو ہے ان کا مرتبہ
گر حق کی جستجو ۔۔۔۔۔

حق کیا ہے کیا بتائوں کہ وہ لا حدود ہے
آلِ نبی میں نورِ خُدا کا وجود ہے
حمد و ثنائ میں اس لیئے شامل درود ہے
حق اس کا ہے یہ حق کے نہیں کوئی فاصلہ
گر حق کی جستجو ۔۔۔۔۔

با حُکمِ رب تھی کسی نورِ عین سےالفت
یہ بارہا سُنا ہے شاہِ مشرقین سے
میرا حُسین مُجھ سے اور میں حُسین سے
کیا فرق ہے حُسین و نبی میں رہا بتا
گر حق کی جستجو ۔۔۔۔۔

بیعت نہ کی حُسین نے تو قتل کر دیا
بدکر تو اس کے بعد کو کیوں گھر جلا دیا
سیدانیوں کو لوٹ لیا چھین لی ردا
آلِ رسول کی تھی بھلا اس میں کیا خطا
گر حق کی جستجو ۔۔۔۔۔

سیدانیوں کے سر سے کُھلے اجدھام میں
اسیر کر کے لے گئے دربارِ عام میں
پھر بھی نہ چھوڑا قید کیا انو شام میں
اجرِ رسالت اس طرح اُمت نے کی ادا
گر حق کی جستجو ۔۔۔۔۔

جس پر پہاڑ ٹوٹے گاغم کا وہ روئے گا
آئے گا چین دن کو نہ راتوں کو سوئے گا
ہو گا رفیق جوئی تو یہ حال ہوئے گا
تاریخ جب آئے گی ہوئے گا غم سوا
گر حق کی جستجو ۔۔۔۔۔

اپنے نبی کو غم ہے تو ہم دور کیوں رہے
لینے کو پُرسہ جاتے ہیں گریہ کو نہ چلے
مل کر انیس کیوں نہیں ماتم بپا کرے
سبطِ نبی کے غم میں ہے یہ مجلسِ اعزا
گر حق کی جستجو ۔۔۔۔۔


gar haq ki justuju hai to bazme aza may aa
batlaun tujhko majlis o matam hai kyun bapa

haq ki arsh farsh may phaili hui zia
haq kehte hai usay jo hai meezan e kibriya
haq kehte hai jise wo hai emaan e ambiya
haq ki sifat to khaas may hai ek mustufa
gar haq ki justuju....

wo mustufa ke jinka mohamed hai paak naam
wo jinke khaul o fayl se haq ka mila dawa
yani baghair wahi jo karte nahi kalam
quran bata raha hai jo hai inka martaba
gar haq ki justuju....

haq kya hai kya bataun ke wo la hudood hai
aale nabi may noore khuda ka wujood hai
hamd o sana may isliye shaamil durood hai
haq iska hai ye haq kay nahi koi faasla
gar haq ki justuju....

ulfat ba hukme rab thi kisi noore ain se
ye baarha suna hai shahe mashraqain se
mera hussain mujhse aur mai hussain se
kya farq hai hussain o nabi may raha bata
gar haq ki justuju....

bayyat na ki hussain ne to qatl kar diya
badkar to iske baad ko kyun ghar jala diya
saydaniyo ko loot liya cheen li rida
aale rasool ki thi bhala ismay kya khata
gar haq ki justuju....

saydaniyo ke sar se khule ajdaham may
aseer karke le gaye darbar e aam may
phi bhi na chora qaid kiya ino shaam may
ajre risalat is tarha ummat ne ki ada
gar haq ki justuju....

jispar pahad tootega gham ka wo royega
aayega chain din ko na raton ko soyega
hoga rafeeq joyi to ye haal hoyega
tareekh jab aayegi gham hoyega siwa
gar haq ki justuju....

apne nabi ko gham hai to hum door kyun rahe
lene ko pursa jaate hai girya ko na chalay
milkar anees kyun nahi matam bapa kare
sibte nabi ke gham may hai ye majlise aza
gar haq ki justuju....
Noha - Gar Haq Ki Justuju
Shayar: Anees Pehersari
Nohaqan: Tableeq e Imamia (Nazim Hussain)
Download Mp3
Listen Online