قسم کھائی کعبہ کی رب کی ہوا کامیاب آج کے دن
علی کی زبان پر یہ آیا
فضتوں بے رب کعبہ

یہ حد آخری بندگی کی چلی تیغ ملجم کی سر پر
تھا سجدہ سے سر کو اٹھایا
فضتوں بے رب کعبہ

وہ بدر احد اور خیبر وہ صفین خندق کا منظر
وہ ہجرت جی شب اک بستر فتوحت تھی بیش قیمت
مگر جب لگی سر پہ ضربت تہ مولا کے لب پر یہ آیا
فضتوں بے رب کعبہ

ہر ایک دور میں ہر صدی میں یقین خرد کی گلی میں
اندھیروں میں اور روشنی میں ملی انبیائ کو بھی منزل
پڑی دین پر جب بھی مشکل تو مشکل کشا نے بچایا
فضتوں بے رب کعبہ

یہ وعدہ خدا سے علی کا میری سلطنت میں خدایا
نہ سوئے گا کوئی بھی بھوکا یہ وعدہ ہوا آج پورا
ارے آیا نے انصاف پایا علی کی زبان پر یہ آیا
فضتوں بے رب کعبہ

فراق کو بھی چھینا کسی نے جلائے تھا در تیرگی نے
بتدا کربلا کیکیا صبر مولا علی نے تھی یہ ا
شہادت ہوئی فاطمہ کی علی نے جنازہ اٹھایا
فضتوں بے رب کعبہ

نبی جس کو کعبے سے لائے جسے گود میں اپنی پالا
فرشتوں نے جھولا جھولایا جو ایمان کا اطمینان نعمت
زیارت تھی جس کی عبادت وہ اپنے لہو میں نہایا
فضتوں بے رب کعبہ

علی کا ہے سجدہ سفر میں حد ہے بندگی بڑھ رہی ہے
عروج اس کا ہے کربلا میں حسین شہید وفا نے
کٹائی جو سجدے میں گردن تو سجدے سے سجدہ ملایا
فضتوں بے رب کعبہ

جو مرکز تھا کوفہ علی کا وہاں شام والوں نے ایک دن
نبی زادیوں کو پھرایا قمر یہ تسلسل تہ دیکھو
جو تھا حوصلہ مرتضیٰ کا وہی صبر زینب نے پایا
فضتوں بے رب کعبہ


qasam khayi kaabe ki rab ki hua kamiyab aaj ke din
ali ki zuban par ye aaya
fuzto be rabbe kaaba

ye hadh aakhri bandagi ki, chali taygh muljim ki sar par
tha sajde se sar ko uthaya
fuzto be....

wo badr-o-ohad aur khyber, wo siffeen-o-khandaq ka manzar
wo hijrat ji shab ek bistar, fatoohat thi besh keemat
magar jab lagi sar pe zarbat, to maula ke lab par ye aaya
fuzto be....

har ek daur may har sadi may, yakeeno khirad ki gali may
andheron may aur roshni may, mili ambiya ko bhi manzil
padi deen par jab bhi mushkil, to mushkil kusha ne bachaya
fuzto be....

ye waada khuda se ali ka, meri saltanat may khudaya
na soyega koi bhi bhooka, ye waada hua aaj poora
aray ayah ne insaf paaya, ali ki zuban par ye aaya
fuzto be....

fidak ko bhi cheena kisi ne, jalaye tha dar teergi ne
kiya sabr maula ali ne, thi ye ibteda karbala ki
shahdat hui fathema ki, ali ne janaza uthaya
fuzto be....

nabi jisko kaabe se laaye, jise godh may apni paala
farishto ne jhoola jhulaya, jo emaan ka itmame naymat
ziarat thi jiski ibadat, wo apn elahoo may nahaya
fuzto be....

ali ka hai sajda safar may, hadhe bandagi badh rahi hai
urooj uska hai karbala may, hussaine shahede wafa ne
katayi jo sajde may gardan, to sajde se sajda milaya
fuzto be....

jo markaz tha koofa ali ka, wahan sham walon ne ek din
nabi zadiyon ko phiraya, qamar ye tasalsul to dekho
jo tha hausla murtaza ka, wohi sabr zainab ne paaya
fuzto be....
Noha - Fuzto Be Rabe Kaaba
Shayar: Qamar Hasnain
Nohaqan: Ali Murtaza
Download mp3
Listen Online